Skip to main content

اَلرَّحْمٰنُ عَلَى الْعَرْشِ اسْتَوٰى

ٱلرَّحْمَٰنُ
جو رحمن ہے
عَلَى
پر
ٱلْعَرْشِ
عرش (پر)
ٱسْتَوَىٰ
وہ مستوی ہے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

وہ رحمان (کائنات کے) تخت سلطنت پر جلوہ فرما ہے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

وہ رحمان (کائنات کے) تخت سلطنت پر جلوہ فرما ہے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

وہ بڑی مہر والا، اس نے عرش پر استواء فرمایا جیسا اس کی شان کے لائق ہے،

احمد علی Ahmed Ali

رحمان جو عرش پر جلوہ گر ہے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

جو رحمٰن ہے، عرش پر قائم ہے (١)

٥۔١ بغیر کسی حد بندی اور کیفیت بیان کرنے کے، جس طرح کہ اس کی شان کے لائق ہے یعنی اللہ تعالٰی عرش پر قائم ہے، لیکن کس طرح اور کیسے؟ یہ کیفیت کسی کو معلوم نہیں۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

(یعنی خدائے) رحمٰن جس نےعرش پر قرار پکڑا

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

جو رحمٰن ہے، عرش پر قائم ہے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

وہ خدائے رحمن ہے جس کا عرش پر اقتدار قائم ہے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

وہ رحمان عرش پر اختیار و اقتدار رکھنے والا ہے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

(وہ) نہایت رحمت والا (ہے) جو عرش (یعنی جملہ نظام ہائے کائنات کے اقتدار) پر متمکّن ہوگیا،