Skip to main content

اُولٰۤٮِٕكَ مَأْوٰٮهُمُ النَّارُ بِمَا كَانُوْا يَكْسِبُوْنَ

أُو۟لَٰٓئِكَ
یہی لوگ
مَأْوَىٰهُمُ
ٹھکانہ ان کا
ٱلنَّارُ
آگ ہے
بِمَا
بوجہ ان کے
كَانُوا۟
جو تھے وہ
يَكْسِبُونَ
کمائی کرتے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اُن کا آخری ٹھکانہ جہنم ہو گا اُن برائیوں کی پاداش میں جن کا اکتساب وہ (اپنے اس غلط عقیدے اور غلط طرز عمل کی وجہ سے) کرتے رہے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اُن کا آخری ٹھکانہ جہنم ہو گا اُن برائیوں کی پاداش میں جن کا اکتساب وہ (اپنے اس غلط عقیدے اور غلط طرز عمل کی وجہ سے) کرتے رہے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

ان لوگوں کا ٹھکانا دوزخ ہے بدلہ ان کی کمائی کا،

احمد علی Ahmed Ali

ان کا ٹھکانا آگ ہے بسبب اس کے جو کرتے تھے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

ایسے لوگوں کا ٹھکانا ان کے اعمال کی وجہ سے دوزخ ہے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

ان کا ٹھکانہ ان (اعمال) کے سبب جو وہ کرتے ہیں دوزخ ہے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

ایسے لوگوں کا ٹھکانا ان کے اعمال کی وجہ سے دوزخ ہے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

یہ وہ ہیں جن کا ٹھکانا دوزخ ہے ان کرتوتوں کی پاداش میں جو وہ دنیا میں کرتے رہے ہیں۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

یہ سب وہ ہیں جن کے اعمال کی بنا پر ان کا ٹھکانا جہّنم ہے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

انہی لوگوں کا ٹھکانا جہنم ہے ان اعمال کے بدلہ میں جو وہ کماتے رہے،