Skip to main content

الَّذِيْنَ هُمْ فِىْ صَلَاتِهِمْ خَاشِعُوْنَ ۙ

ٱلَّذِينَ
یہ وہ لوگ ہیں
هُمْ
وہ جو
فِى
میں
صَلَاتِهِمْ
اپنی نمازوں (میں)
خَٰشِعُونَ
خشوع کرنے والے ہیں

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اپنی نماز میں خشوع اختیار کرتے ہیں

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اپنی نماز میں خشوع اختیار کرتے ہیں

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

جو اپنی نماز میں گڑگڑاتے ہیں

احمد علی Ahmed Ali

جو اپنی نماز میں عاجزی کرنے والے ہیں

أحسن البيان Ahsanul Bayan

جو اپنی نماز میں خشوع کرتے ہیں (١)

٢۔١ خُشُوع سے مراد، قلب کی یکسوئی اور مصروفیت ہے۔ قلبی یکسوئی یہ ہے کہ نماز کی حالت میں بہ قصد خیالات اور وسوسوں کے ہجوم سے دل کو محفوظ رکھے اور اللہ کی عظمت و جلالت کا نقش اپنے دل پر بٹھا نے کی سعی کرے۔ اعضا و دل کی یکسوئی یہ ہے کہ ادھر ادھر نہ دیکھے، کھیل کود نہ کرے، بالوں اور کپڑوں کو سنوارنے میں نہ لگا رہے بلکہ خوف و خشیت اور عاجزی کی ایسی کیفیت طاری ہو، جیسے عام طور پر بادشاہ یا کسی بڑے شخص کے سامنے ہوتی ہے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

جو نماز میں عجزو نیاز کرتے ہیں

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

جو اپنی نماز میں خشوع کرتے ہیں

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

جو اپنی نمازوں میں خشوع و خضوع کرتے ہیں۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

جو اپنی نمازوں میں گڑگڑانے والے ہیں

طاہر القادری Tahir ul Qadri

جو لوگ اپنی نماز میں عجز و نیاز کرتے ہیں،