Skip to main content

فَلَمَّا بَلَغَا مَجْمَعَ بَيْنِهِمَا نَسِيَا حُوْتَهُمَا فَاتَّخَذَ سَبِيْلَهٗ فِى الْبَحْرِ سَرَبًا

فَلَمَّا
تو جب
بَلَغَا
وہ دونوں پہنچے
مَجْمَعَ
سنگم پر/جمع ہونے کی جگہ پر
بَيْنِهِمَا
درمیان ان دو دریاؤں کے
نَسِيَا
تو دونوں بھول گئے
حُوتَهُمَا
اپنی مچھلی کو
فَٱتَّخَذَ
پس اس نے بنا لیا
سَبِيلَهُۥ
اپنا راستہ
فِى
میں
ٱلْبَحْرِ
سمندر
سَرَبًا
سرنگ کی طرح

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

پس جب وہ ان کے سنگم پر پہنچے تو اپنی مچھلی سے غافل ہو گئے اور وہ نکل کر اس طرح دریا میں چلی گئی جیسے کہ کوئی سرنگ لگی ہو

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

پس جب وہ ان کے سنگم پر پہنچے تو اپنی مچھلی سے غافل ہو گئے اور وہ نکل کر اس طرح دریا میں چلی گئی جیسے کہ کوئی سرنگ لگی ہو

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

پھر جب وہ دونوں ان دریاؤں کے ملنے کی جگہ پہنچے اپنی مچھلی بھول گئے اور اس نے سمندر میں اپنی راہ لی سرنگ بناتی،

احمد علی Ahmed Ali

پھر جب وہ دو دریاؤں کے جمع ہونے کی جگہ پر پہنچے دونوں اپنی مچھلی کو بھول گئے پھر مچھلی نے دریا میں سرنگ کی طرح کا راستہ بنا لیا

أحسن البيان Ahsanul Bayan

جب وہ دونوں دریا کے سنگم پر پہنچے، وہاں اپنی مچھلی بھول گئے جس نے دریا میں سرنگ جیسا اپنا راستہ بنا لیا

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

جب ان کے ملنے کے مقام پر پہنچے تو اپنی مچھلی بھول گئے تو اس نے دریا میں سرنگ کی طرح اپنا رستہ بنالیا

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

جب وه دونوں دریا کے سنگم پر پہنچے، وہاں اپنی مچھلی بھول گئے جس نے دریا میں سرنگ جیسا اپنا راستہ بنالیا

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

تو جب وہ دونوں ان دونوں دریاؤں کے اکٹھا ہونے کی جگہ پر پہنچے تو وہ دونوں اپنی مچھلی کو بھول گئے اور اس نے دریا میں داخل ہونے کے لئے سرنگ کی طرح اپنا راستہ بنا لیا۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

پھر جب دونوں مجمع البحرین تک پہنچ گئے تو اپنی مچھلی چھوڑ گئے اور اس نے سمندر میں سرنگ بناکر اپنا راستہ نکال لیا

طاہر القادری Tahir ul Qadri

سو جب وہ دونوں دو دریاؤں کے درمیان سنگم پر پہنچے تو وہ دونوں اپنی مچھلی (وہیں) بھول گئے پس وہ (تلی ہوئی مچھلی زندہ ہوکر) دریا میں سرنگ کی طرح اپنا راستہ بناتے ہوئے (نکل گئی)،