Skip to main content

فَقُوْلَا لَهٗ قَوْلًا لَّيِّنًا لَّعَلَّهٗ يَتَذَكَّرُ اَوْ يَخْشٰى

فَقُولَا
پس کہو دونوں
لَهُۥ
اس کو
قَوْلًا
بات
لَّيِّنًا
نرم
لَّعَلَّهُۥ
شاید کہ وہ
يَتَذَكَّرُ
نصیحت پکڑے
أَوْ
یا
يَخْشَىٰ
ڈر جائے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اس سے نرمی کے ساتھ بات کرنا، شاید کہ وہ نصیحت قبول کرے یا ڈر جائے"

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اس سے نرمی کے ساتھ بات کرنا، شاید کہ وہ نصیحت قبول کرے یا ڈر جائے"

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

تو اس سے نرم بات کہنا اس امید پر کہ وہ دھیان کرے یا کچھ ڈرے

احمد علی Ahmed Ali

سو اس سے نرمی سے بات کرو شاید وہ نصیحت حاصل کرے یا ڈر جائے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

اسے نرمی (١) سے سمجھاؤ کہ شاید وہ سمجھ لے یا ڈر جائے۔

٤٤۔١ یہ وصف بھی اللہ سے دعا کے لئے بہت ضروری ہے۔ کیونکہ سختی سے لوگ بدکتے ہیں اور دور بھاگتے ہیں اور نرمی سے قریب آتے ہیں اور متاثر ہوتے ہیں اگر وہ ہدایت قبول کرنے والے ہوتے ہیں۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اور اس سے نرمی سے بات کرنا شاید وہ غور کرے یا ڈر جائے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

اسے نرمی سے سمجھاؤ کہ شاید وه سمجھ لے یا ڈر جائے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

اس سے نرمی کے ساتھ بات کرنا کہ شاید وہ نصیحت قبول کرے یا ڈر جائے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اس سے نرمی سے بات کرنا کہ شاید وہ نصیحت قبول کرلے یا خوف زدہ ہوجائے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

سو تم دونوں اس سے نرم (انداز میں) گفتگو کرنا شاید وہ نصیحت قبول کر لے یا (میرے غضب سے) ڈرنے لگے،