Skip to main content

تِلْكَ اٰيٰتُ الْكِتٰبِ الْحَكِيْمِۙ

تِلْكَ
یہ
ءَايَٰتُ
آیات ہیں
ٱلْكِتَٰبِ
کتاب
ٱلْحَكِيمِ
حکیم کی

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

یہ کتاب حکیم کی آیات ہیں

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

یہ کتاب حکیم کی آیات ہیں

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

یہ حکمت والی کتاب کی آیتیں ہیں،

احمد علی Ahmed Ali

یہ آیتیں حکمت والی کتا ب کی ہیں

أحسن البيان Ahsanul Bayan

یہ حکمت والی کتاب کی آیتیں ہیں۔

١۔١ اس کے آغاز میں بھی یہ حروف مقطعات ہیں جن کے معنی و مراد کا علم صرف اللہ تعالٰی کو ہے۔ تاہم بعض مفسرین نے اس کے دو فوائد بڑے اہم بیان کئے ہیں۔ ایک یہ کہ یہ قرآن اسی قسم کے حروف مقطعات سے ترتیب و تالیف پایا ہے جس کی مثل تالیف پیش کرنے سے عرب عاجز آگئے۔ یہ اس بات کی دلیل ہے کہ یہ قرآن اللہ ہی کا نازل کردہ ہے اور جس پیغمبر پر نازل ہوا ہے وہ سچا رسول ہے جو شریعت وہ لے کر آیا ہے، انسان اس کا محتاج ہے اور اس کی اصلاح اور سعادت کی تکمیل اسی شریعت سے ممکن ہے۔ دوسرا یہ کہ مشرکین اپنے ساتھیوں کو اس قرآن کے سننے سے روکتے تھے مبادا وہ اس سے متاثر ہو کر مسلمان ہو جائیں۔ اللہ تعالٰی نے مختلف سورتوں کا آغاز ان حروف مقطعات سے فرمایا تاکہ وہ اس کے سننے پر مجبور ہوجائیں کیونکہ یہ انداز بیان نیا اور اچھوتا تھا (ایسر التفاسیر) واللہ اعلم۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

یہ حکمت کی (بھری ہوئی) کتاب کی آیتیں ہیں

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

یہ حکمت والی کتاب کی آیتیں ہیں

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

یہ کتابِ حکیم کی آیتیں ہیں۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

یہ حکمت سے بھری ہوئی کتاب کی آیتیں ہیں

طاہر القادری Tahir ul Qadri

یہ حکمت والی کتاب کی آیتیں ہیں،

تفسير ابن كثير Ibn Kathir

سورة بقرہ کی تفسیر کے اول میں ہی حروف مقطعات کے معنی اور مطلب کی توضیح کردی گئی ہے۔ یہ قرآن ہدایت شفا اور رحمت ہے اور ان نیک کاروں کے لئے جو شریعت کے پورے پابند ہیں۔ نماز ادا کرتے ہیں ارکان اوقات وغیرہ کی حفاظت کے ساتھ ہی نوافل سنت وغیرہ بھی نہیں چھوڑتے۔ فرض زکوٰۃ ادا کرتے ہیں صلہ رحمی سلوک واحسان سخاوت اور داددہش کرتے رہتے ہیں۔ آخرت کی جزاء کا انہیں کامل یقین ہے اس لئے اللہ کی طرف پوری رغبت کرتے ہیں ثواب کے کام کرتے ہیں اور رب کے اجر پر نظریں رکھتے ہیں۔ نہ ریاکاری کرتے ہیں نہ لوگوں سے داد چاہتے ہیں۔ ان اوصاف والے راہ یافتہ ہیں۔ راہ اللہ پر لگادیئے گئے ہیں اور یہی وہ لوگ ہیں جو دین و دنیا میں فلاح نجات اور کامیابی حاصل کریں گے۔