Skip to main content

وَاِذَا عَلِمَ مِنْ اٰيٰتِنَا شَيْــًٔـاتَّخَذَهَا هُزُوًا ۗ اُولٰۤٮِٕكَ لَهُمْ عَذَابٌ مُّهِيْنٌ ۗ

وَإِذَا
اور جب
عَلِمَ
وہ جان لیتا ہے
مِنْ
میں سے
ءَايَٰتِنَا
ہماری آیات
شَيْـًٔا
کوئی چیز
ٱتَّخَذَهَا
بنالیتا ہے اس کو
هُزُوًاۚ
مذاق
أُو۟لَٰٓئِكَ
یہی لوگ
لَهُمْ
ان کے لیے
عَذَابٌ
عذاب ہے
مُّهِينٌ
رسوا کرنے والا۔ ذلیل کرنے والے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

ہماری آیات میں سے کوئی بات جب اس کے علم میں آتی ہے تو وہ اُن کا مذاق بنا لیتا ہے ایسے سب لوگوں کے لیے ذلت کا عذاب ہے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

ہماری آیات میں سے کوئی بات جب اس کے علم میں آتی ہے تو وہ اُن کا مذاق بنا لیتا ہے ایسے سب لوگوں کے لیے ذلت کا عذاب ہے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

اور جب ہماری آیتوں میں سے کسی پر اطلاع پائے اس کی ہنسی بناتا ہے ان کے لیے خواری کا عذاب،

احمد علی Ahmed Ali

اورجب ہماری آیتوں میں سے کسی کو سن لیتاہے تو اس کی ہنسی اڑاتا ہے ایسوں کے لیے ذلت کا عذاب ہے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

وہ جب ہماری آیتوں میں سے کسی آیت کی خبر پا لیتا ہے تو اس کی ہنسی اڑاتا ہے (١) یہی لوگ ہیں جن کے لئے رسوائی کی مار ہے۔

٩۔١ یعنی اول تو وہ قرآن کو غور سے سنتا ہی نہیں اور اگر کوئی بات اس کے کان میں پڑ جاتی ہے یا کوئی بات اس کے علم میں آجاتی ہے تو اسے مذاق کا موضوع بنا لیتا ہے۔ اپنی کم عقلی اور نافہمی کی وجہ سے یا کفر و معصیت پر اصرار و استکبار کی وجہ سے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اور جب ہماری کچھ آیتیں اسے معلوم ہوتی ہیں تو ان کی ہنسی اُڑاتا ہے۔ ایسے لوگوں کے لئے ذلیل کرنے والا عذاب ہے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

وه جب ہماری آیتوں میں سے کسی آیت کی خبر پالیتا ہے تو اس کی ہنسی اڑاتا ہے، یہی لوگ ہیں جن کے لیے رسوائی کی مار ہے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

اور جب اس کو ہماری آیات میں سے کسی کا علم ہوتا ہے تو وہ ان کو مذاق بنا لیتا ہے ایسے لوگوں کیلئے رسوا کُن عذاب ہے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اور اسے جب بھی ہماری کسی نشانی کا علم ہوتا ہے تو اس کا مذاق اڑاتا ہے بیشک یہی وہ لوگ ہیں جن کے لئے رسوا کن عذاب ہے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

اور جب اسے ہماری (قرآنی) آیات میں سے کسی چیز کا (بھی) علم ہو جاتا ہے تو اسے مذاق بنا لیتا ہے، ایسے ہی لوگوں کے لئے ذلّت انگیز عذاب ہے،