Skip to main content
bismillah
حمٓ
ها ميم

ح م

تفسير
تَنزِيلُ
نازل کرتا ہے
ٱلْكِتَٰبِ
کتاب کا
مِنَ
طرف
ٱللَّهِ
اللہ کی
ٱلْعَزِيزِ
جو زبردست ہے
ٱلْحَكِيمِ
، حکمت والا ہے

اِس کتاب کا نزول اللہ کی طرف سے ہے جو زبردست اور حکیم ہے

تفسير
إِنَّ
بیشک
فِى
میں
ٱلسَّمَٰوَٰتِ
آسمانوں
وَٱلْأَرْضِ
اور زمین میں
لَءَايَٰتٍ
البتہ نشانیاں ہیں
لِّلْمُؤْمِنِينَ
ایمان لانے والوں کے لیے

حقیقت یہ ہے کہ آسمانوں اور زمین میں بے شمار نشانیاں ہیں ایمان لانے والوں کے لیے

تفسير
وَفِى
اور میں
خَلْقِكُمْ
تمہاری پیدائش
وَمَا
اور جو
يَبُثُّ
پھیلا رہا ہے
مِن
میں سے
دَآبَّةٍ
جانوروں
ءَايَٰتٌ
نشانیاں ہیں
لِّقَوْمٍ
ان لوگوں کے لیے
يُوقِنُونَ
جو یقین رکھتے ہوں

اور تمہاری اپنی پیدائش میں، اور اُن حیوانات میں جن کو اللہ (زمین میں) پھیلا رہا ہے، بڑی نشانیاں ہیں اُن لوگوں کے لیے جو یقین لانے والے ہیں

تفسير
وَٱخْتِلَٰفِ
اور اختلاف میں
ٱلَّيْلِ
رات
وَٱلنَّهَارِ
اور دن کے
وَمَآ
اور جو
أَنزَلَ
نازل کیا
ٱللَّهُ
اللہ نے
مِنَ
سے
ٱلسَّمَآءِ
آسمان
مِن
میں سے
رِّزْقٍ
رزق
فَأَحْيَا
پھر اس نے زندہ کیا
بِهِ
ساتھ اس کے
ٱلْأَرْضَ
زمین کو
بَعْدَ
بعد
مَوْتِهَا
اس کی موت کے
وَتَصْرِيفِ
اور گردش میں
ٱلرِّيَٰحِ
ہواؤں کی
ءَايَٰتٌ
نشانیاں ہیں
لِّقَوْمٍ
اس قوم کے لیے
يَعْقِلُونَ
جو عقل رکھتی ہو

اور شب و روز کے فرق و اختلاف میں، اور اُس رزق میں جسے اللہ آسمان سے نازل فرماتا ہے پھر اس کے ذریعہ سے مردہ زمین کو جِلا اٹھاتا ہے، اور ہواؤں کی گردش میں بہت نشانیاں ہیں اُن لوگوں کے لیے جو عقل سے کام لیتے ہیں

تفسير
تِلْكَ
یہ
ءَايَٰتُ
آیات ہیں
ٱللَّهِ
اللہ کی
نَتْلُوهَا
ہم پڑھتے ہیں ان کو
عَلَيْكَ
آپ پر
بِٱلْحَقِّۖ
حق کے ساتھ
فَبِأَىِّ
تو ساتھ کون سی
حَدِيثٍۭ
بات
بَعْدَ
کے بعد
ٱللَّهِ
اللہ کے
وَءَايَٰتِهِۦ
اور اس کی آیات کے
يُؤْمِنُونَ
وہ ایمان لائیں گے

یہ اللہ کی نشانیاں ہیں جنہیں ہم تمہارے سامنے ٹھیک ٹھیک بیان کر رہے ہیں اب آخر اللہ اور اس کی آیات کے بعد اور کون سی بات ہے جس پر یہ لوگ ایمان لائیں گے

تفسير
وَيْلٌ
ہلاکت ہے
لِّكُلِّ
واسطے ہر
أَفَّاكٍ
بہت جھوٹے
أَثِيمٍ
بہت گناہ گار کے

تباہی ہے ہر اُس جھوٹے بد اعمال شخص کے لیے

تفسير
يَسْمَعُ
وہ سنتا ہے
ءَايَٰتِ
آیات کو
ٱللَّهِ
اللہ کی
تُتْلَىٰ
پڑھی جاتی ہیں
عَلَيْهِ
اس پر
ثُمَّ
پھر
يُصِرُّ
وہ اڑ جاتا ہے۔ اصرار کرتا ہے
مُسْتَكْبِرًا
تکبر کرتے ہوئے
كَأَن
گویا کہ
لَّمْ
نہیں
يَسْمَعْهَاۖ
اس نے سنا اس کو
فَبَشِّرْهُ
تو خوش خبری دے دو اس کو
بِعَذَابٍ
عذاب کی
أَلِيمٍ
دردناک

جس کے سامنے اللہ کی آیات پڑھی جاتی ہیں، اور وہ اُن کو سنتا ہے، پھر پورے استکبار کے ساتھ اپنے کفر پر اِس طرح اڑا رہتا ہے کہ گویا اس نے اُن کو سنا ہی نہیں ایسے شخص کو درد ناک عذاب کا مژدہ سنا دو

تفسير
وَإِذَا
اور جب
عَلِمَ
وہ جان لیتا ہے
مِنْ
میں سے
ءَايَٰتِنَا
ہماری آیات
شَيْـًٔا
کوئی چیز
ٱتَّخَذَهَا
بنالیتا ہے اس کو
هُزُوًاۚ
مذاق
أُو۟لَٰٓئِكَ
یہی لوگ
لَهُمْ
ان کے لیے
عَذَابٌ
عذاب ہے
مُّهِينٌ
رسوا کرنے والا۔ ذلیل کرنے والے

ہماری آیات میں سے کوئی بات جب اس کے علم میں آتی ہے تو وہ اُن کا مذاق بنا لیتا ہے ایسے سب لوگوں کے لیے ذلت کا عذاب ہے

تفسير
مِّن
وَرَآئِهِمْ
ان کے آگے
جَهَنَّمُۖ
جہنم ہے
وَلَا
اور نہ
يُغْنِى
کام آئے گا
عَنْهُم
ان کو
مَّا
جو
كَسَبُوا۟
انہوں نے کمایا
شَيْـًٔا
کچھ بھی
وَلَا
اور نہ
مَا
جو
ٱتَّخَذُوا۟
انہوں نے بنا لیے
مِن
سے
دُونِ
سوا
ٱللَّهِ
اللہ کے
أَوْلِيَآءَۖ
سرپرست۔ مددگار
وَلَهُمْ
اور ان کے لیے
عَذَابٌ
عذاب ہے
عَظِيمٌ
بڑا

اُن کے آگے جہنم ہے جو کچھ بھی انہوں نے دنیا میں کمایا ہے اس میں سے کوئی چیز اُن کے کسی کام نہ آئے گی، نہ اُن کے وہ سرپرست ہی اُن کے لیے کچھ کر سکیں گے جنہیں اللہ کو چھوڑ کر انہوں نے اپنا ولی بنا رکھا ہے اُن کے لیے بڑا عذاب ہے

تفسير
کے بارے میں معلومات :
الجاثیہ
القرآن الكريم:الجاثية
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):Al-Jasiyah
سورہ نمبر:45
کل آیات:37
کل کلمات:488
کل حروف:2191
کل رکوعات:4
مقام نزول:مکہ مکرمہ
ترتیب نزولی:65
آیت سے شروع:4473