Skip to main content

كَانُوْا قَلِيْلًا مِّنَ الَّيْلِ مَا يَهْجَعُوْنَ

كَانُوا۟
تھے وہ
قَلِيلًا
کم ہی
مِّنَ
سے
ٱلَّيْلِ
رات میں (سے)
مَا
جو
يَهْجَعُونَ
وہ سوتے تھے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

راتوں کو کم ہی سوتے تھے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

راتوں کو کم ہی سوتے تھے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

وہ رات میں کم سویا کرتے

احمد علی Ahmed Ali

وہ رات کے وقت تھوڑا عرصہ سویا کرتے تھے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

وہ رات کو بہت کم سویا کرتے تھے (١)

١٧۔١ ھجوع کے معنی ہیں رات کو سونا۔ ما یھجعون میں ما تاکید کے لیے ہے۔ وہ رات کو کم سوتے تھے، مطلب ہے ساری رات سو کر غفلت اور عیش و عشرت میں نہیں گزار دیتے تھے۔ بلکہ رات کا کچھ حصہ اللہ کی یاد میں اور اس کی بارگاہ میں گڑ گڑاتے ہوئے گزارتے تھے۔ جیسا کہ حدیث بھی قیام اللیل کی تاکید ہے۔ مثلاً ایک حدیث میں فرمایا ' لوگو! لوگوں کو کھانا کھلاؤ، صلہ رحمی کرو، سلام پھیلاؤ اور رات کو اٹھ کر نماز پڑھو، جب کہ لوگ سوئے ہوئے ہوں، تم سلامتی کے ساتھ جنت میں داخل ہو جاؤ گے ' (مسند احمد ٥۔٤٥١)۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

رات کے تھوڑے سے حصے میں سوتے تھے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

وه رات کو بہت کم سویا کرتے تھے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

یہ لوگ رات کو بہت کم سویا کرتے تھے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

یہ رات کے وقت بہت کم سوتے تھے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

وہ راتوں کو تھوڑی سی دیر سویا کرتے تھے،