Skip to main content

عَلَّمَ الْقُرْاٰنَۗ

عَلَّمَ
اس نے تعلیم دی
ٱلْقُرْءَانَ
قرآن کی

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اِس قرآن کی تعلیم دی ہے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اِس قرآن کی تعلیم دی ہے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

نے اپنے محبوب کو قرآن سکھایا

احمد علی Ahmed Ali

قرآن سکھایا

أحسن البيان Ahsanul Bayan

قرآن سکھایا (١)

٢۔١ کہتے ہیں کہ اہل مکہ کے جواب میں ہے جو کہتے رہتے یہ قرآن محمد کو کوئی انسان سکھاتا ہے بعض کہتے ہیں ان کے اس قول کے جواب میں ہے کہ رحمٰن کیا ہے؟ قرآن سکھانے کا مطلب ہے، اسے آسان کر دیا، یا اللہ نے اپنے پیغمبر کو سکھایا اور پیغمبر نے امت کو سکھلایا۔ اس سورت میں اللہ نے اپنی بہت سی نعمتیں گنوائی ہیں۔ چونکہ تعلیم قرآن ان میں قدر ومنزلت اور اہمیت و افادیت کے لحاظ سے سب سے نمایاں ہے، اس لیے پہلے اسی نعمت کا ذکر فرمایا۔(فتح القدیر)

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اسی نے قرآن کی تعلیم فرمائی

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

قرآن سکھایا

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

نے قرآن کی تعلیم دی۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اس نے قرآن کی تعلیم دی ہے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

جس نے (خود رسولِ عربی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو) قرآن سکھایا٭، ٭ کفّار و مشرکینِ مکہ کے اِس الزام کے جواب میں یہ آیت اتری کہ محمد صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو (معاذ اللہ) کوئی شخص خفیہ قرآن سکھاتا ہے۔ حوالہ جات کے لئے ملاحظہ کریں: تفسیر بغوی، خازن، القشیری، البحر المحیط، الجمل، فتح القدیر، المظہری، اللباب، الصاوی، السراج المنیر، مراغی، اضواء البیان اور مجمع البیان وغیرھم۔