Skip to main content

فَيَوْمَٮِٕذٍ لَّا يُسْـَٔـلُ عَنْ ذَنْۢبِهٖۤ اِنْسٌ وَّلَا جَاۤنٌّۚ

فَيَوْمَئِذٍ
تو اس دن
لَّا
نہ
يُسْـَٔلُ
پوچھا جائے گا
عَن
کے بارے میں
ذَنۢبِهِۦٓ
اپنے گناہوں
إِنسٌ
کوئی انسان
وَلَا
اور نہ
جَآنٌّ
کوئی جن

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اُس روز کسی انسان اور کسی جن سے اُس کا گناہ پوچھنے کی ضرورت نہ ہوگی

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اُس روز کسی انسان اور کسی جن سے اُس کا گناہ پوچھنے کی ضرورت نہ ہوگی

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

تو اس دن گنہگار کے گناہ کی پوچھ نہ ہوگی کسی آدمی اور جِن سے

احمد علی Ahmed Ali

پس اس دن اپنے گناہ کی بات نہ کوئی انسان اور نہ کوئی جن پوچھا جائے گا

أحسن البيان Ahsanul Bayan

اس دن کسی انسان اور کسی جن سے اس کے گناہوں کی پرسش نہ کی جائے گی (١)

٣٩۔١ یعنی جس وقت وہ قبروں سے باہر نکلیں گے۔ ورنہ بعد میں موقف حساب میں ان سے باز پرس کی جائے گی، بعض نے اس کا مطلب یہ بیان کیا ہے کہ گناہوں کی بابت نہیں پوچھا جائے گا، کیونکہ انکا تو پورا ریکارڈ فرشتوں کے پاس بھی ہوگا اور اللہ کے علم میں بھی۔ البتہ پوچھا جائے گا کہ تم نے یہ کیوں کیے؟ ، یا یہ مطلب ہے، ان سے نہیں پوچھا جائے گا بلکہ انسانی اعضا خود بول کر بتلائیں گے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اس روز نہ تو کسی انسان سے اس کے گناہوں کے بارے میں پرسش کی جائے گی اور نہ کسی جن سے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

اس دن کسی انسان اورکسی جن سے اس کے گناہوں کی پرسش نہ کی جائے گی

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

پس اس دن کسی انسان یا جن سے اس کے گناہ کے متعلق سوال نہیں کیا جائے گا۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

پھر اس دن کسی انسان یا جن سے اس کے گناہ کے بارے میں سوال نہیں کیا جائے گا

طاہر القادری Tahir ul Qadri

سو اُس دن نہ تو کسی انسان سے اُس کے گناہ کی بابت پوچھا جائے گا اور نہ ہی کسی جِن سے،