Skip to main content

عَلَّمَهُ الْبَيَانَ

عَلَّمَهُ
سکھایا اس کو
ٱلْبَيَانَ
بولنا

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اور اسے بولنا سکھایا

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اور اسے بولنا سکھایا

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

ما کان وما یکون کا بیان انہیں سکھایا

احمد علی Ahmed Ali

اسے بولنا سکھایا

أحسن البيان Ahsanul Bayan

اور اسے بولنا سکھایا (٣)

٤۔٣ اس بیان سے مراد ہر شخص کی اپنی مادری بولی ہے جو بغیر سیکھے از خود ہر شخص بول لیتا اور اس میں اپنے مافی الضمیر کا اظہار کر لیتا ہے، حتیٰ کے وہ چھوٹا بچہ بھی بول لیتا ہے، جس کو کسی بات کا علم اور شعور نہیں ہوتا۔ یہ تعلیم الٰہی کا نتیجہ ہے جس کا ذکر اس آیت میں ہے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اسی نے اس کو بولنا سکھایا

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

اور اسے بولنا سکھایا

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

اسی نے اسے بولنا (مافی الضمیر بیان کرنا) سکھایا۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اور اسے بیان سکھایا ہے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

اسی نے اِسے (یعنی نبیِ برحق صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو مَا کَانَ وَ مَا یَکُونُ کا) بیان سکھایا٭، ٭ مفسرین کرام نے بیان کا معنی علمِ مَا کَانَ وَ مَا یَکُونُ بھی بیان کیا ہے۔ حوالہ جات کے لئے ملاخطہ کریں: تفسیر بغوی، خازن، جمل، المظہری، اللباب، زاد المسیر، صاوی، السراج المنیر اور مجمع البیان۔