Skip to main content

وَمِنْ شَرِّ غَاسِقٍ اِذَا وَقَبَۙ

وَمِن
اور سے
شَرِّ
شر
غَاسِقٍ
اندھیرا کرنے والی کے
إِذَا
جب
وَقَبَ
وہ داخل ہوجائے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اور رات کی تاریکی کے شر سے جب کہ وہ چھا جائے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اور رات کی تاریکی کے شر سے جب کہ وہ چھا جائے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

اور اندھیری ڈالنے والے کے شر سے جب وہ ڈوبے

احمد علی Ahmed Ali

اور اندھیری رات کے شر سے جب وہ چھا جائے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

اور اندھیری رات کی تاریکی کے شر سے جب اس کا اندھیرا پھیل جائے۔

۳۔۱رات کے اندھیرے میں خطرناک درندے اپنی کچھاروں سے اور موذی جانور اپنے بلوں سے اور اسی طرح جرائم پیشہ افراد اپنے مذموم ارادوں کو عملی جامہ پہنانے کے لیے نکلتے ہیں ان الفاظ کے ذریعے سے ان تمام سے پناہ طلب کی گئی۔ غاسق، رات وقت داخل ہو جائے،چھا جائے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اور شب تاریکی کی برائی سے جب اس کااندھیرا چھا جائے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

اور اندھیری رات کی تاریکی کے شر سے جب اس کا اندھیرا پھیل جائے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

اور رات کی تاریکی کے شر سے جبکہ وہ چھا جائے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اور اندھیری رات کے شر سے جب اس کا اندھیرا چھا جائے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

اور (بالخصوص) اندھیری رات کے شر سے جب (اس کی) ظلمت چھا جائے،