Skip to main content

قَدْ كَانَتْ اٰيٰتِىْ تُتْلٰى عَلَيْكُمْ فَـكُنْتُمْ عَلٰۤى اَعْقَابِكُمْ تَـنْكِصُوْنَۙ

قَدْ
تحقیق
كَانَتْ
تھیں
ءَايَٰتِى
میری آیات
تُتْلَىٰ
پڑھی جاتیں
عَلَيْكُمْ
تم پر
فَكُنتُمْ
تو تھے تم
عَلَىٰٓ
پر
أَعْقَٰبِكُمْ
اپنی ایڑیوں پر
تَنكِصُونَ
تم پھرجاتے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

میری آیات سنائی جاتی تھیں تو تم (رسول کی آواز سُنتے ہی) الٹے پاؤں بھاگ نکلتے تھے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

میری آیات سنائی جاتی تھیں تو تم (رسول کی آواز سُنتے ہی) الٹے پاؤں بھاگ نکلتے تھے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

بیشک میری آیتیں تم پر پڑھی جاتی تھیں تو تم اپنی ایڑیوں کے بل الٹے پلٹتے تھے

احمد علی Ahmed Ali

تمہیں میری آیتیں سنائی جاتی تھیں پھر تم ایڑیوں پر الٹے بھاگتے تھے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

میری آیتیں تو تمہارے سامنے پڑھی جاتی تھیں (١) پھر بھی تم اپنی ایڑیوں کے بل الٹے بھاگتے تھے (٢)

٦٦۔١ یعنی قرآن مجید یا کلام الٰہی، جن میں پیغمبر کے فرمودات بھی شامل ہیں۔
٦٦۔٢ یعنی آیا احکام الٰہی سن کر تم منہ پھیر لیتے تھے اور ان سے بھا گتے تھے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

میری آیتیں تم کو پڑھ پڑھ کر سنائی جاتی تھیں اور تم الٹے پاؤں پھر پھر جاتے تھے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

میری آیتیں تو تمہارے سامنے پڑھی جاتی تھیں پھر بھی تم اپنی ایڑیوں کے بل الٹے بھاگتے تھے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

(وہ وقت یاد کرو جب) میری آیتیں تمہارے سامنے پڑھی جاتی تھیں تو تم (سنتے ہی) الٹے پاؤں پلٹ جایا کرتے تھے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

جب ہماری آیتیں تمہارے سامنے پڑھی جاتی تھیں تو تم الٹے پاؤں واپس چلے جارہے تھے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

بیشک میری آیتیں تم پر پڑھ پڑھ کر سنائی جاتی تھیں تو تم ایڑیوں کے بل الٹے پلٹ جایا کرتے تھے،