Skip to main content

وَقَالُوْا رَبَّنَا عَجِّلْ لَّنَا قِطَّنَا قَبْلَ يَوْمِ الْحِسَابِ

وَقَالُوا۟
اور انہوں نے کہا
رَبَّنَا
اے ہمارے رب
عَجِّل
جلدی دے دے
لَّنَا
ہمارے لئے
قِطَّنَا
حصہ ہمارا
قَبْلَ
پہلے
يَوْمِ
دن سے
ٱلْحِسَابِ
حساب کے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اور یہ کہتے ہیں کہ اے ہمارے رب، یوم الحساب سے پہلے ہی ہمارا حصہ ہمیں جلدی سے دے دے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اور یہ کہتے ہیں کہ اے ہمارے رب، یوم الحساب سے پہلے ہی ہمارا حصہ ہمیں جلدی سے دے دے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

اور بولے اے ہمارے رب ہمارا حصہ ہمیں جلد دے دے حساب کے دن سے پہلے

احمد علی Ahmed Ali

اور کہتے ہیں اے رب ہمارے! ہمارا حصہ ہمیں حساب کے دن سے پہلے ہی دے دے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

اور انہوں نے کہا کہ اے ہمارے رب! ہماری سر نوشت تو ہمیں روز حساب سے پہلے ہی دے دے (١)

١٦۔١ یعنی ہمارے نامہ اعمال کے مطابق ہمارے حصے میں اچھی یا بری سزا جو بھی ہے، یوم حساب آنے سے پہلے ہی دنیا میں دے دے۔ یہ و قوع قیامت کو ناممکن سمجھتے ہوئے انہوں نے تمسخر کے طور پر کہا۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اور کہتے ہیں کہ اے ہمارے پروردگار ہم کو ہمارا حصہ حساب کے دن سے پہلے ہی دے دے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

اور انہوں نے کہا کہ اے ہمارے رب! ہماری سرنوشت تو ہمیں روز حساب سے پہلے ہی دے دے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

اور وہ (ازراہِ مذاق) کہتے ہیں کہ ہمارے پروردگار کے (عذاب میں سے) ہمارا حصہ ہمیں حساب کے دن (قیامت) سے پہلے دے دے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اور یہ کہتے ہیں کہ پروردگار ہمارا قسمت کا لکھا ہوا روزِ حساب سے پہلے ہی ہمیں دیدے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

اور وہ کہتے ہیں: اے ہمارے رب! روزِ حساب سے پہلے ہی ہمارا حصّہ ہمیں جلد دے دے،