Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR
bismillah

صٓ ۗ وَالْقُرْاٰنِ ذِى الذِّكْرِۗ

وَالْقُرْاٰنِ ذِي الذِّكْرِ
قسم ہے قرآن کی، نصحیت والے

ص، قسم ہے نصیحت بھرے قرآن کی

تفسير

بَلِ الَّذِيْنَ كَفَرُوْا فِىْ عِزَّةٍ وَّشِقَاقٍ

بَلِ الَّذِيْنَ
بلکہ وہ لوگ
كَفَرُوْا
جنہوں نے کفر کیا
فِيْ عِزَّةٍ
غلبے میں ہیں
وَّشِقَاقٍ
اور مخالفت میں

بلکہ یہی لوگ، جنہوں نے ماننے سے انکار کیا ہے، سخت تکبر اور ضد میں مبتلا ہیں

تفسير

كَمْ اَهْلَـكْنَا مِنْ قَبْلِهِمْ مِّنْ قَرْنٍ فَنَادَوْا وَّلَاتَ حِيْنَ مَنَاصٍ

كَمْ اَهْلَكْنَا
کتنی ہی ہلاک کیں ہم نے
مِنْ قَبْلِهِمْ
ان سے پہلے
مِّنْ قَرْنٍ
بستیوں میں سے
فَنَادَوْا
تو انہوں نے پکارا/ چیخ و پکار کی
وَّلَاتَ
اور نہ تھی
حِيْنَ مَنَاصٍ
اس وقت کوئی نجات

اِن سے پہلے ہم ایسی کتنی ہی قوموں کو ہلاک کر چکے ہیں (اور جب اُن کی شامت آئی ہے) تو وہ چیخ اٹھے ہیں، مگر وہ وقت بچنے کا نہیں ہوتا

تفسير

وَعَجِبُوْۤا اَنْ جَاۤءَهُمْ مُّنْذِرٌ مِّنْهُمْ ۖ وَقَالَ الْكٰفِرُوْنَ هٰذَا سٰحِرٌ كَذَّابٌ ۚ

وَعَجِبُوْٓا
اور انہوں نے تعجب کیا
اَنْ جَاۗءَهُمْ
اس بات پر کہ آیا ان کے پاس
مُّنْذِرٌ مِّنْهُمْ ۡ
ایک ڈرانے والا ان میں سے
وَقَالَ الْكٰفِرُوْنَ
اور کافروں نے کہا
ھٰذَا سٰحِرٌ
یہ ساحر ہے/ جادوگر ہے
كَذَّابٌ
سخت جھوٹا

اِن لوگوں کو اس بات پر بڑا تعجب ہوا کہ ایک ڈرانے والا خود اِنہی میں سے آگیا منکرین کہنے لگے کہ "یہ ساحرہے، سخت جھوٹا ہے

تفسير

اَجَعَلَ الْاٰلِهَةَ اِلٰهًا وَّاحِدًا ۖ اِنَّ هٰذَا لَشَىْءٌ عُجَابٌ

اَجَعَلَ الْاٰلِـهَةَ
کیا اس نے بنالیا بہت سے الٰہوں کو
اِلٰــهًا وَّاحِدًا ښ
الٰہ ایک ہی
اِنَّ ھٰذَا
بیشک یہ
لَشَيْءٌ عُجَابٌ
البتہ ایک چیز ہے عجیب

کیا اِس نے سارے خداؤں کی جگہ بس ایک ہی خدا بنا ڈالا؟ یہ تو بڑی عجیب بات ہے"

تفسير

وَانْطَلَقَ الْمَلَاُ مِنْهُمْ اَنِ امْشُوْا وَاصْبِرُوْا عَلٰۤى اٰلِهَتِكُمْ ۖ اِنَّ هٰذَا لَشَىْءٌ يُّرَادُ ۖ

وَانْطَلَقَ الْمَلَاُ
اور چل دیئے سردار
مِنْهُمْ
ان میں سے (یہ کہتے ہوئے)
اَنِ امْشُوْا
کہ چلو
وَاصْبِرُوْا
اور جمے رہو
عَلٰٓي اٰلِـهَتِكُمْ ښ
اپنے الٰہوں پر
اِنَّ ھٰذَا
بیشک یہ
لَشَيْءٌ
البتہ ایک چیز ہے
يُّرَادُ
جو ارادہ کی جاتی ہے

اور سرداران قوم یہ کہتے ہوئے نکل گئے کہ "چلو اور ڈٹے رہو اپنے معبودوں کی عبادت پر یہ بات تو کسی اور ہی غرض سے کہی جا رہی ہے

تفسير

مَا سَمِعْنَا بِهٰذَا فِى الْمِلَّةِ الْاٰخِرَةِ ۖ اِنْ هٰذَاۤ اِلَّا اخْتِلَاقٌ ۚ

مَا سَمِعْنَا بِھٰذَا
نہیں سنایا ہم نے اس کے بارے میں
فِي الْمِلَّةِ
ملت میں/ دین میں
الْاٰخِرَةِ ښ
پچھلی/ پچھلے
اِنْ ھٰذَآ
نہیں یہ
اِلَّا اخْتِلَاقٌ
مگر من گھڑت

یہ بات ہم نے زمانہ قریب کی ملت میں کسی سے نہیں سنی یہ کچھ نہیں ہے مگر ایک من گھڑت بات

تفسير

ءَاُنْزِلَ عَلَيْهِ الذِّكْرُ مِنْۢ بَيْنِنَاۗ بَلْ هُمْ فِىْ شَكٍّ مِّنْ ذِكْرِىْۚ بَلْ لَّمَّا يَذُوْقُوْا عَذَابِۗ

ءَاُنْزِلَ
کیا اتارا گیا ہے
عَلَيْهِ الذِّكْرُ
اس پر ذکر
مِنْۢ بَيْنِنَا ۭ
ہمارے درمیان سے
بَلْ هُمْ
بلکہ وہ
فِيْ شَكٍّ
شک میں ہیں
مِّنْ ذِكْرِيْ ۚ
میرے ذکر سے
بَلْ لَّمَّا
بلکہ نہیں
يَذُوْقُوْا عَذَابِ
انہوں نے چھکا میرا عذاب

کیا ہمارے درمیان بس یہی ایک شخص رہ گیا تھا جس پر اللہ کا ذکر نازل کر دیا گیا؟" اصل بات یہ ہے کہ یہ میرے "ذکر"پر شک کر رہے ہیں، اور یہ ساری باتیں اس لیے کر رہے ہیں کہ انہوں نے میرے عذاب کا مزا چکھا نہیں ہے

تفسير

اَمْ عِنْدَهُمْ خَزَاۤٮِٕنُ رَحْمَةِ رَبِّكَ الْعَزِيْزِ الْوَهَّابِۚ

اَمْ عِنْدَهُمْ
کیا ان کے پاس
خَزَاۗىِٕنُ
خزانے ہیں
رَحْمَةِ
رحمت کے
رَبِّكَ
تیرے رب کے
الْعَزِيْزِ
جو غالب ہے
الْوَهَّابِ
دینے والا ہے/ داتا ہے

کیا تیرے داتا اور غالب پروردگار کی رحمت کے خزانے اِن کے قبضے میں ہیں؟

تفسير

اَمْ لَهُمْ مُّلْكُ السَّمٰوٰتِ وَالْاَرْضِ وَمَا بَيْنَهُمَاۗفَلْيَرْتَقُوْا فِى الْاَسْبَابِ

اَمْ لَهُمْ
یا ان کے لئے
مُّلْكُ السَّمٰوٰتِ
بادشاہت ہے آسمانوں کی
وَالْاَرْضِ
اور زمین کی
وَمَا
اور جو
بَيْنَهُمَا ۣ
ان دونوں کے درمیان ہے
فَلْيَرْتَقُوْا
پس چاہیے کہ وہ اوپر چڑھ جائیں
فِي الْاَسْبَابِ
رسیوں میں/ کے ذریعے

کیا یہ آسمان و زمین اور ان کے درمیان کی چیزوں کے مالک ہیں؟ اچھا تو یہ عالم اسباب کی بلندیوں پر چڑھ کر دیکھیں!

تفسير
کے بارے میں معلومات :
ص
القرآن الكريم:ص
آية سجدہ (سجدة):24
سورۃ کا نام (latin):Sad
سورہ نمبر:38
کل آیات:88
کل کلمات:732
کل حروف:3760
کل رکوعات:5
مقام نزول:مکہ مکرمہ
ترتیب نزولی:38
آیت سے شروع:3970