Skip to main content

وَقَالُوْا لَوْلَا نُزِّلَ هٰذَا الْقُرْاٰنُ عَلٰى رَجُلٍ مِّنَ الْقَرْيَتَيْنِ عَظِيْمٍ

وَقَالُوا۟
اور انہوں نے کہا
لَوْلَا
کیوں نہیں
نُزِّلَ
نازل کیا گیا
هَٰذَا
یہ
ٱلْقُرْءَانُ
قرآن
عَلَىٰ
اوپر
رَجُلٍ
کسی شخص کے
مِّنَ
سے
ٱلْقَرْيَتَيْنِ
دو بستیوں میں
عَظِيمٍ
عظمت والے ۔ بڑے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

کہتے ہیں، یہ قرآن دونوں شہروں کے بڑے آدمیوں میں سے کسی پر کیوں نہ نازل کیا گیا؟

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

کہتے ہیں، یہ قرآن دونوں شہروں کے بڑے آدمیوں میں سے کسی پر کیوں نہ نازل کیا گیا؟

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

اور بولے کیوں نہ اتارا گیا یہ قرآن ان دو شہروں کے کسی بڑے آدمی پر

احمد علی Ahmed Ali

اور کہا کیوں یہ قرآن ان دو بستیوں کےکسی سردار پر نازل نہیں کیا گیا

أحسن البيان Ahsanul Bayan

اور کہنے لگے، یہ قرآن ان دونوں بستیوں میں کسی بڑے آدمی پر کیوں نازل نہیں کیا گیا (١)

٣١۔١ دونوں بستیوں سے مراد مکہ اور طائف ہے اور بڑے آدمی سے مراد اکثر مفسرین کے نزدیک مکے کا ولید بن مغیرہ اور طائف کا عروہ بن ثقفی ہے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اور (یہ بھی) کہنے لگے کہ یہ قرآن ان دونوں بستیوں (یعنی مکّے اور طائف) میں سے کسی بڑے آدمی پر کیوں نازل نہ کیا گیا؟

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

اور کہنے لگے، یہ قرآن ان دونوں بستیوں میں سے کسی بڑے آدمی پر کیوں نہ نازل کیا گیا

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

اور وہ کہتے ہیں کہ یہ قرآن دو (مشہور) بستیوں (مکہ و طائف) کے کسی بڑے آدمی پر کیوں نہیں نازل کیا گیا؟

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اور یہ کہنے لگے کہ آخر یہ قرآن دونوں بستیوں (مکہ و طائف) کے کسی بڑے آدمی پر کیوں نہیں نازل کیا گیا ہے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

اور کہنے لگے: یہ قرآن (مکّہ اور طائف کی) دو بستیوں میں سے کسی بڑے آدمی (یعنی کسی وڈیرے، سردار اور مال دار) پر کیوں نہیں اتارا گیا،