Skip to main content

ذُقْ ۚ اِنَّكَ اَنْتَ الْعَزِيْزُ الْكَرِيْمُ

ذُقْ
(کہا جائے گا) چکھو
إِنَّكَ
بیشک تم
أَنتَ
تم
ٱلْعَزِيزُ
زبردست تھے،
ٱلْكَرِيمُ
عزت والے تھے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

چکھ اس کا مزا، بڑا زبردست عزت دار آدمی ہے تُو

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

چکھ اس کا مزا، بڑا زبردست عزت دار آدمی ہے تُو

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

چکھ، ہاں ہاں تو ہی بڑا عزت والا کرم والا ہے

احمد علی Ahmed Ali

چکھ بے شک تو تو بڑا عزت والا بزرگی والا ہے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

(اس سے کہا جائے گا) چکھتا جا تو تو بڑا ذی عزت اور بڑے اکرام والا تھا (١)۔

٤٩۔١ یعنی دنیا میں اپنے طور پر تو بڑا ذی عزت اور صاحب اکرام بنا پھرتا تھا اور اہل ایمان کو حقارت کی نظر سے دیکھتا تھا۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

(اب) مزہ چکھ۔ تو بڑی عزت والا (اور) سردار ہے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

(اس سے کہا جائے گا) چکھتا جا تو تو بڑا ذی عزت اور بڑے اکرام واﻻ تھا

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

مزا چکھ تُو تو بڑا معزز اور مکرم ہے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

کہو کہ اب اپنے کئے کا مزہ چکھو کہ تم تو بڑے صاحب هعزّت اور محترم کہے جاتے تھے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

مَزہ چکھ لے، ہاں تُو ہی (اپنے گمان اور دعوٰی میں) بڑا معزّز و مکرّم ہے،