Skip to main content

فَبِاَىِّ اٰلَاۤءِ رَبِّكَ تَتَمَارٰى

فَبِأَىِّ
پس کون سی
ءَالَآءِ
نعمتوں کے ساتھ
رَبِّكَ
اپنے رب کی
تَتَمَارَىٰ
تم جھگڑتے ہو

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

پس اے مخاطب، اپنے رب کی کن کن نعمتوں میں تو شک کرے گا؟"

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

پس اے مخاطب، اپنے رب کی کن کن نعمتوں میں تو شک کرے گا؟"

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

تو اے سننے والے اپنے رب کی کون سی نعمتوں میں شک کرے گا،

احمد علی Ahmed Ali

پس اپنے رب کی کون کون سی نعمت میں تو شک کرے گا

أحسن البيان Ahsanul Bayan

پس اے انسان تو اپنے رب کی کس کس نعمت کے بارے میں جھگڑے گا؟ (١)

٥٥۔١ یا شک کرے گا اور ان کو جھٹلائے گا، جب کہ وہ اتنی عام اور واضح ہیں کہ ان کا انکار ممکن ہے اور نہ چھپانا ہی۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

تو (اے انسان) تو اپنے پروردگار کی کون سی نعمت پر جھگڑے گا

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

پس اے انسان تو اپنے رب کی کس کس نعمت کے بارے میں جھگڑے گا؟

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

پس تو اے مخاطب اپنے پروردگار کی کن کن نعمتوں میں شک کرے گا۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اب تم اپنے پروردگار کی کس نعمت پر شک کررہے ہو

طاہر القادری Tahir ul Qadri

سو (اے انسان!) تو اپنے پروردگار کی کن کن نعمتوں میں شک کرے گا،