Skip to main content

كَاَنَّهُنَّ الْيَاقُوْتُ وَالْمَرْجَانُۚ

كَأَنَّهُنَّ
گویا کہ وہ
ٱلْيَاقُوتُ
یاقوت ہیں
وَٱلْمَرْجَانُ
اور موتی

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

ایسی خوبصورت جیسے ہیرے اور موتی

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

ایسی خوبصورت جیسے ہیرے اور موتی

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

گویا وہ لعل اور یاقوت اور مونگا ہیں

احمد علی Ahmed Ali

گویا کہ وہ یاقوت اور مونگا ہیں

أحسن البيان Ahsanul Bayan

وہ حوریں مثل یاقوت اور مونگے کے ہوں گی (١)

٥٨۔١ یعنی صفائی میں یاقوت اور سفیدی و سرخی میں موتی یا مونگے کی طرح ہونگی جس طرح صحیح حدیث میں بھی ان کے حسن و جمال کو ان الفاظ میں فرمایا گیا ہے ' ان کے حسن و جمال کی وجہ سے ان کی پنڈلی کا گودا، گوشت اور ہڈی کے باہر نظر آئے گا، ایک دوسری روایت میں فرمایا کہ جنتیوں کی بیویاں اتنی حسین و جمیل ہوں گی کہ اگر ان میں سے ایک عورت اہل ارض کی طرف جھانک لے تو آسمان و زمین کے درمیان کا سارا حصہ چمک اٹھے اور خوشبو سے بھر جائے۔ اور اس کے سر کا دوپٹہ اتنا قیمتی ہوگا کہ وہ دنیا و مافیہا سے بہتر ہے ۔(صحیح البخاری کتاب الجہاد باب الحورالعین)

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

گویا وہ یاقوت اور مرجان ہیں

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

وه حوریں مثل یاقوت اور مونگے کے ہوں گی

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

ان جنتوں میں نیچی نگاہ والی (حوریں) ہوں گی جن کو ان (جنتیوں) سے پہلے نہ کسی انسان نے چھوا ہوگا اور نہ کسی جن نے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

وہ حوریں اس طرح کی ہوں گی جیسے سرخ یاقوت اور مونگے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

گویا وہ (حوریں) یا قوت اور مرجان ہیں،