Skip to main content

كَلَّا لَوْ تَعْلَمُوْنَ عِلْمَ الْيَقِيْنِۗ

كَلَّا
ہرگز نہیں
لَوْ
کاش
تَعْلَمُونَ
تم جانتے ہوتے
عِلْمَ
جاننا
ٱلْيَقِينِ
یقین کا

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

ہرگز نہیں، اگر تم یقینی علم کی حیثیت سے (اِس روش کے انجام کو) جانتے ہوتے (تو تمہارا یہ طرز عمل نہ ہوتا)

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

ہرگز نہیں، اگر تم یقینی علم کی حیثیت سے (اِس روش کے انجام کو) جانتے ہوتے (تو تمہارا یہ طرز عمل نہ ہوتا)

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

ہاں ہاں اگر یقین کا جاننا جانتے تو مال کی محبت نہ رکھتے

احمد علی Ahmed Ali

ایسا نہیں چاہیئے کاش تم یقینی طور پر جانتے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

ہرگز نہیں اگر تم یقینی طور پر جان لو۔ (۱)

۵۔۱مطلب یہ ہے کہ اگر تم اس غفلت کا انجام اسطرح یقینی طور پر جان لو جس طرح دنیا کی کسی دیکھی بھالی چیز کا تم یقین کرتے ہو تو تم یقینا تکاثر وتفاخر میں مبتلا نہ ہو۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

دیکھو اگر تم جانتے (یعنی) علم الیقین (رکھتے تو غفلت نہ کرتے)

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

ہرگز نہیں اگر تم یقینی طور پر جان لو

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

ہرگز نہیں! اگر تم یقینی طور پر (اس روش کے انجام کو) جانتے (تو ہرگز ایسا نہ کرتے)۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

دیکھو اگر تمہیں یقینی علم ہوجاتا

طاہر القادری Tahir ul Qadri

ہاں ہاں! کاش تم (مال و زَر کی ہوس اور اپنی غفلت کے انجام کو) یقینی علم کے ساتھ جانتے (تو دنیا میں کھو کر آخرت کو اس طرح نہ بھولتے)،