Skip to main content

الَّذِيْنَ هُمْ عَنْ صَلَاتِهِمْ سَاهُوْنَۙ

ٱلَّذِينَ
وہ لوگ
هُمْ
وہ
عَن
سے
صَلَاتِهِمْ
اپنی نمازوں (سے)
سَاهُونَ
بےخبر ہیں

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

جو اپنی نماز سے غفلت برتتے ہیں

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

جو اپنی نماز سے غفلت برتتے ہیں

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

جو اپنی نماز سے بھولے بیٹھے ہیں

احمد علی Ahmed Ali

جو اپنی نماز سے غافل ہیں

أحسن البيان Ahsanul Bayan

جو اپنی نماز سے غافل ہیں (١)

٥۔١ اس مراد وہ لوگ ہیں نماز یا تو پڑھتے ہی نہیں یا پہلے پڑھتے رہے پھر سست ہوگئے یا نماز کو اس کے اپنے مسنوں وقت میں نہیں پڑھتے۔ جب جی چاہتا ہے پڑھ لیتے ہیں یا تاخیر سے پڑھنے کو معمول بنا لیتے ہیں یا خشوع خضوع کے ساتھ نہیں پڑھتے۔ یہ سارے ہی مفہوم اس میں آ جاتے ہیں اس لیے نماز کی مذکورہ ساری ہی کوتاہیوں سے بچنا چاہیے۔ کہاں اس مقام پر ذکر کرنے سے یہ بھی واضح ہے کہ نماز میں ان کوتاہیوں کے مرتکب وہی لوگ ہوتے ہیں جو آخرت کی جزا اور حساب کتاب پر یقین نہیں رکھتے۔ اسی لیے منافقین کی ایک صفت یہ بھی بیان کی گئی ہے۔(وَاِذَا قَامُوْٓا اِلَى الصَّلٰوةِ قَامُوْا كُسَالٰى ۙ يُرَاۗءُوْنَ النَّاسَ وَلَا يَذْكُرُوْنَ اللّٰهَ اِلَّا قَلِيْلًا ١٤٢؁ۡۙ) 4۔النساء;142)

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

جو نماز کی طرف سے غافل رہتے ہیں

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

جو اپنی نماز سے غافل ہیں

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

جو اپنی نماز (کی ادائیگی) میں غفلت برتتے ہیں۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

جو اپنی نمازوں سے غافل رہتے ہیں

طاہر القادری Tahir ul Qadri

جو اپنی نماز (کی روح) سے بے خبر ہیں (یعنی انہیں محض حقوق اﷲ یاد ہیں حقوق العباد بھلا بیٹھے ہیں)،