Skip to main content

فَاَلْقٰٮهَا فَاِذَا هِىَ حَيَّةٌ تَسْعٰى

فَأَلْقَىٰهَا
تو اس نے ڈال دیا اس کو
فَإِذَا
تو اچانک ۔ دفعتا
هِىَ
وہ
حَيَّةٌ
ایک سانپ تھا
تَسْعَىٰ
جو بل کھا رہا تھا۔ دوڑ رہا تھا

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اس نے پھینک دیا اور یکایک وہ ایک سانپ تھی جو دَوڑ رہا تھا

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اس نے پھینک دیا اور یکایک وہ ایک سانپ تھی جو دَوڑ رہا تھا

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

تو موسیٰ نے ڈال دیا تو جبھی وہ دوڑتا ہوا سانپ ہوگیا

احمد علی Ahmed Ali

پھر اسے ڈال دیا تو اسی وقت وہ دوڑتا ہوا سانپ ہو گیا

أحسن البيان Ahsanul Bayan

ڈالتے ہی وہ سانپ بن کر دوڑنے لگی۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

تو انہوں نے اس کو ڈال دیا اور وہ ناگہاں سانپ بن کر دوڑنے لگا

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

ڈالتے ہی وه سانﭗ بن کر دوڑنے لگی

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

چنانچہ موسیٰ نے اسے پھینک دیا تو وہ ایک دم دوڑتا ہوا سانپ بن گیا۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اب جو موسٰی نے ڈال دیا تو کیا دیکھا کہ وہ سانپ بن کر دوڑ رہا ہے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

پس انہوں نے اسے (زمین پر) ڈال دیا تو وہ اچانک سانپ ہوگیا (جو ادھر ادھر) دوڑنے لگا،