Skip to main content

فَيَأْتِيَهُمْ بَغْتَةً وَّهُمْ لَا يَشْعُرُوْنَۙ

فَيَأْتِيَهُم
تو وہ آجائے گا ان کے پاس
بَغْتَةً
اچانک
وَهُمْ
اور وہ
لَا
نہ
يَشْعُرُونَ
شعور رکھتے ہوں گے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

پھر جب وہ بے خبری میں ان پر آ پڑتا ہے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

پھر جب وہ بے خبری میں ان پر آ پڑتا ہے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

تو وہ اچانک ان پر آجائے گا اور انہیں خبر نہ ہوگی،

احمد علی Ahmed Ali

پھر وہ ان پر اچاناک آئے گا اور انہیں خبر بھی نہ ہوگی

أحسن البيان Ahsanul Bayan

پس وہ عذاب ان کو ناگہاں آجائے گا انہیں اس کا شعور بھی نہ ہوگا۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

وہ ان پر ناگہاں آ واقع ہوگا اور انہیں خبر بھی نہ ہوگی

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

پس وه عذاب ان کو ناگہاں آجائے گا انہیں اس کا شعور بھی نہ ہو گا

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

چنانچہ وہ (عذاب) اس طرح اچانک ان پر آجائے گا کہ انہیں احساس بھی نہ ہوگا۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

کہ یہ عذاب ان پر اچانک نازل ہوجائے اور انہیں شعور تک نہ ہو

طاہر القادری Tahir ul Qadri

پس وہ (عذاب) انہیں اچانک آپہنچے گا اور انہیں شعور (بھی) نہ ہوگا،