Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR
bismillah

طٰسٓمّٓ

طٰسۗمّۗ
ط س م

ط س م

تفسير

تِلْكَ اٰيٰتُ الْكِتٰبِ الْمُبِيْنِ

تِلْكَ
یہ
اٰيٰتُ الْكِتٰبِ الْمُبِيْنِ
آیات میں کتاب روشن کی

یہ کتاب مبین کی آیات ہیں

تفسير

لَعَلَّكَ بَاخِعٌ نَّـفْسَكَ اَ لَّا يَكُوْنُوْا مُؤْمِنِيْنَ

لَعَلَّكَ
شاید کہ آپ
بَاخِعٌ
ہلاک کرنے والے ہیں
نَّفْسَكَ
اپنی جان کو
اَلَّا يَكُوْنُوْا
کہ نہیں وہ ہیں
مُؤْمِنِيْنَ
ایمان لانے والے

اے محمدؐ، شاید تم اس غم میں اپنی جان کھو دو گے کہ یہ لوگ ایمان نہیں لاتے

تفسير

اِنْ نَّشَأْ نُنَزِّلْ عَلَيْهِمْ مِّنَ السَّمَاۤءِ اٰيَةً فَظَلَّتْ اَعْنَاقُهُمْ لَهَا خٰضِعِيْنَ

اِنْ نَّشَاْ
اگر ہم چاہیں
نُنَزِّلْ
ہم اتار دیں
عَلَيْهِمْ
ان پر
مِّنَ السَّمَاۗءِ
آسمان سے
اٰيَةً
کوئی نشانی
فَظَلَّتْ
تو ہوجائیں
اَعْنَاقُهُمْ
ان کی گردنیں
لَهَا خٰضِعِيْنَ
اس کے لیے جھکنے والی

ہم چاہیں تو آسمان سے ایسی نشانی نازل کر سکتے ہیں کہ اِن کی گردنیں اس کے آگے جھک جائیں

تفسير

وَمَا يَأْتِيْهِمْ مِّنْ ذِكْرٍ مِّنَ الرَّحْمٰنِ مُحْدَثٍ اِلَّا كَانُوْا عَنْهُ مُعْرِضِيْنَ

وَمَا يَاْتِيْهِمْ
اور نہیں آتی ان کے پاس
مِّنْ ذِكْرٍ
کوئی نصیحت
مِّنَ الرَّحْمٰنِ
رحمن کی طرف سے
مُحْدَثٍ
نئی
اِلَّا
مگر
كَانُوْا
وہ ہوتے ہیں
عَنْهُ
اس سے
مُعْرِضِيْنَ
اعراض برتنے والے۔ منہ موڑنے والے

اِن لوگوں کے پاس رحمان کی طرف سے جو نئی نصیحت بھی آتی ہے یہ اس سے منہ موڑ لیتے ہیں

تفسير

فَقَدْ كَذَّبُوْا فَسَيَأْتِيْهِمْ اَنْۢـبٰۤــؤُا مَا كَانُوْا بِهٖ يَسْتَهْزِءُوْنَ

فَقَدْ
تو تحقیق
كَذَّبُوْا
انہوں نے جھٹلادیا
فَسَيَاْتِيْهِمْ
تو عنقریب آئیں گی ان کے پاس
اَنْۢبٰۗـؤُا
خبریں
مَا كَانُوْا
جو تھے وہ
بِهٖ
ساتھ اس کے
يَسْتَهْزِءُوْنَ
مذاق اڑاتے

اب کہ یہ جھٹلا چکے ہیں، عنقریب اِن کو اس چیز کی حقیقت (مختلف طریقوں سے) معلوم ہو جائے گی جس کا یہ مذاق اڑاتے رہے ہیں

تفسير

اَوَلَمْ يَرَوْا اِلَى الْاَرْضِ كَمْ اَنْۢبَتْنَا فِيْهَا مِنْ كُلِّ زَوْجٍ كَرِيْمٍ

اَوَلَمْ يَرَوْا
کیا بھلا نہیں انہوں نے دیکھا
اِلَى الْاَرْضِ
زمین کی طرف
كَمْ
کتنے
اَنْۢبَـتْنَا
اگائے ہم نے
فِيْهَا
اس میں
مِنْ كُلِّ زَوْجٍ
ہر طرح کے جوڑے
كَرِيْمٍ
عمدہ

اور کیا انہوں نے کبھی زمین پر نگاہ نہیں ڈالی کہ ہم نے کتنی کثیر مقدار میں ہر طرح کی عمدہ نباتات اس میں پیدا کی ہیں؟

تفسير

اِنَّ فِىْ ذٰلِكَ لَاٰيَةً ۗ وَّمَا كَانَ اَكْثَرُهُمْ مُّؤْمِنِيْنَ

اِنَّ فِيْ ذٰلِكَ
بیشک اس میں
لَاٰيَةً ۭ
البتہ ایک نشانی ہے
وَمَا
اور نہیں
كَانَ
ہیں
اَكْثَرُهُمْ
ان میں سے اکثر
مُّؤْمِنِيْنَ
ایمان لانے والے

یقیناً اس میں ایک نشانی ہے، مگر ان میں سے اکثر ماننے والے نہیں

تفسير

وَاِنَّ رَبَّكَ لَهُوَ الْعَزِيْزُ الرَّحِيْمُ

وَاِنَّ
اور بیشک
رَبَّكَ
رب تیرا
لَهُوَ الْعَزِيْزُ
البتہ وہ زبردست ہے
الرَّحِيْمُ
رحم فرمانے والا ہے

اور حقیقت یہ ہے کہ تیرا رب زبردست بھی ہے اور رحیم بھی

تفسير

وَاِذْ نَادٰى رَبُّكَ مُوْسٰۤى اَنِ ائْتِ الْقَوْمَ الظّٰلِمِيْنَۙ

وَاِذْ
اور جب
نَادٰي
پکارا
رَبُّكَ
تیرے رب نے
مُوْسٰٓي
موسیٰ کو
اَنِ ائْتِ
کہ آؤ۔ جاؤ
الْقَوْمَ
قوم
الظّٰلِمِيْنَ
ظالم (قوم کے پاس)

اِنہیں اس وقت کا قصہ سناؤ جب کہ تمہارے رب نے موسیٰؑ کو پکارا "ظالم قوم کے پاس جا

تفسير
کے بارے میں معلومات :
الشعراء
القرآن الكريم:الشعراء
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):Asy-Syu'ara'
سورہ نمبر:26
کل آیات:227
کل کلمات:1279
کل حروف:5540
کل رکوعات:11
مقام نزول:مکہ مکرمہ
ترتیب نزولی:47
آیت سے شروع:2932