Skip to main content

لَعَلَّكَ بَاخِعٌ نَّـفْسَكَ اَ لَّا يَكُوْنُوْا مُؤْمِنِيْنَ

لَعَلَّكَ
شاید کہ آپ
بَٰخِعٌ
ہلاک کرنے والے ہیں
نَّفْسَكَ
اپنی جان کو
أَلَّا
کہ نہیں
يَكُونُوا۟
وہ ہیں
مُؤْمِنِينَ
ایمان لانے والے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اے محمدؐ، شاید تم اس غم میں اپنی جان کھو دو گے کہ یہ لوگ ایمان نہیں لاتے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اے محمدؐ، شاید تم اس غم میں اپنی جان کھو دو گے کہ یہ لوگ ایمان نہیں لاتے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

کہیں تم اپنی جان پر کھیل جاؤ گے ان کے غم میں کہ وہ ایمان نہیں لائے

احمد علی Ahmed Ali

شاید تو اپنی جان ہلاک کرنے والا ہے اس لیے کہ وہ ایمان نہیں لاتے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

ان کے ایمان نہ لانے پر شاید آپ تو اپنی جان کھو دیں گے (١)

٣۔١ نبی صلی اللہ علیہ وسلم کو انسانیت سے جو ہمدردی اور ان کی ہدایت کے لئے جو تڑپ تھی، اس میں اس کا اظہار ہے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

(اے پیغمبرﷺ) شاید تم اس (رنج) سے کہ یہ لوگ ایمان نہیں لاتے اپنے تئیں ہلاک کردو گے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

ان کے ایمان نہ ﻻنے پر شاید آپ تو اپنی جان کھودیں گے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

شاید آپ (اس غم میں) جان دے دیں گے کہ یہ لوگ ایمان نہیں لاتے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

کیا آپ اپنے نفس کو ہلاکت میں ڈال دیں گے کہ یہ لوگ ایمان نہیں لارہے ہیں

طاہر القادری Tahir ul Qadri

(اے حبیبِ مکرّم!) شاید آپ (اس غم میں) اپنی جانِ (عزیز) ہی دے بیٹھیں گے کہ وہ ایمان نہیں لاتے،