Skip to main content

وَمَا يَأْتِيْهِمْ مِّنْ ذِكْرٍ مِّنَ الرَّحْمٰنِ مُحْدَثٍ اِلَّا كَانُوْا عَنْهُ مُعْرِضِيْنَ

وَمَا
اور نہیں
يَأْتِيهِم
آتی ان کے پاس
مِّن
کوئی
ذِكْرٍ
نصیحت
مِّنَ
طرف سے
ٱلرَّحْمَٰنِ
رحمن کی
مُحْدَثٍ
نئی
إِلَّا
مگر
كَانُوا۟
وہ ہوتے ہیں
عَنْهُ
اس سے
مُعْرِضِينَ
اعراض برتنے والے۔ منہ موڑنے والے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اِن لوگوں کے پاس رحمان کی طرف سے جو نئی نصیحت بھی آتی ہے یہ اس سے منہ موڑ لیتے ہیں

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اِن لوگوں کے پاس رحمان کی طرف سے جو نئی نصیحت بھی آتی ہے یہ اس سے منہ موڑ لیتے ہیں

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

اور نہیں آتی ان کے پاس رحمٰان کی طرف سے کوئی نئی نصیحت مگر اس سے منہ پھیر لیتے ہیں

احمد علی Ahmed Ali

اور ان کے پاس رحمنٰ کی طرف سے کوئی نئی بات نصیحت کی ایسی نہیں آئی کہ وہ اس سے منہ نہ موڑ لیتے ہوں

أحسن البيان Ahsanul Bayan

اور ان کے پاس رحمان کی طرف سے جو بھی نئی نصیحت آئی یہ اس سے روگردانی کرنے والے بن گئے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اور ان کے پاس (خدائے) رحمٰن کی طرف سے کوئی نصیحت نہیں آتی مگر یہ اس سے منہ پھیر لیتے ہیں

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

اور ان کے پاس رحمٰن کی طرف سے جو بھی نئی نصیحت آئی یہ اس سے روگردانی کرنے والے بن گئے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

اور جب بھی ان کے پاس خدائے رحمن کی طرف سے کوئی نئی نصیحت آتی ہے تو یہ اس سے منہ پھیر لیتے ہیں۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

لیکن ان کی طرف جب بھی خدا کی طرف سے کوئی نیا ذکر آتاہے تو یہ اس سے اعراض ہی کرتے ہیں

طاہر القادری Tahir ul Qadri

اور ان کے پاس (خدائے) رحمان کی جانب سے کوئی نئی نصیحت نہیں آتی مگر وہ اس سے رُوگرداں ہو جاتے ہیں،