Skip to main content

لَـكُنَّا عِبَادَ اللّٰهِ الْمُخْلَصِيْنَ

لَكُنَّا
البتہ ہوتے ہم
عِبَادَ
بندے
ٱللَّهِ
اللہ کے
ٱلْمُخْلَصِينَ
چنے ہوئے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

تو ہم اللہ کے چیدہ بندے ہوتے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

تو ہم اللہ کے چیدہ بندے ہوتے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

تو ضرور ہم اللہ کے چُنے ہوئے بندے ہوتے

احمد علی Ahmed Ali

تو ہم الله کے خالص بندے ہوتے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

تو ہم بھی اللہ کے چیدہ بندے بن جاتے (١)

١٦٩۔١ ذکر سے مراد کوئی کتاب الٰہی یا پیغمبر ہے، یعنی یہ کفار نزول قرآن سے پہلے کہا کرتے تھے کہ ہمارے پاس بھی کوئی آسمانی کتاب ہوتی، جس طرح پہلے لوگوں پر تورات وغیرہ نازل ہوئیں یا کوئی ہاوی ہمیں وعظ و نصیحت کرنے والا ہوتا، تو ہم بھی اللہ کے خالص بندے بن جاتے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

تو ہم خدا کے خالص بندے ہوتے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

تو ہم بھی اللہ کے چیده بندے بن جاتے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

تو یقیناً ہم اللہ کے برگزیدہ بندوں میں سے ہوتے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

تو ہم بھی اللہ کے نیک اور مخلص بندے ہوتے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

تو ہم (بھی) ضرور اﷲ کے برگزیدہ بندے ہوتے،