Skip to main content

الَّذِيْنَ لَا يُؤْتُوْنَ الزَّكٰوةَ وَهُمْ بِالْاٰخِرَةِ هُمْ كٰفِرُوْنَ

ٱلَّذِينَ
وہ لوگ
لَا
جو نہیں
يُؤْتُونَ
ادا کرتے
ٱلزَّكَوٰةَ
زکوۃ
وَهُم
اور وہ
بِٱلْءَاخِرَةِ
آخرت کے ساتھ
هُمْ
وہ
كَٰفِرُونَ
انکاری ہیں

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

جو زکوٰۃ نہیں دیتے اور آخرت کے منکر ہیں

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

جو زکوٰۃ نہیں دیتے اور آخرت کے منکر ہیں

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

وہ جو زکوٰة نہیں دیتے اور وہ آخرت کے منکر ہیں

احمد علی Ahmed Ali

جو زکواة نہیں دیتے اور وہ آخرت کے بھی منکر ہیں

أحسن البيان Ahsanul Bayan

جو زکوۃ نہیں دیتے (١) اور آخرت کے بھی منکر ہی رہتے ہیں۔

٧۔١ یہ سورت مکی ہے۔ زکوۃ ہجرت کے دوسرے سال فرض ہوئی اس لئے اس سے مراد یا تو صدقات ہیں جس کا حکم مسلمانوں کو مکے میں ہی دیا جاتا رہا، جس طرح پہلے صبح وشام کی نماز تھا، پھر ہجرت سے ڈیڑھ سال قبل لیلۃ الاِسراء کو پانچ فرض نمازوں کا حکم ہوا۔ یا پھر زکوۃ سے مراد کلمہ شہادت ہے، جس سے نفس انسانی شرک کی آلودگیوں سے پاک ہو جاتا ہے۔ (ابن کثیر)

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

جو زکوٰة نہیں دیتے اور آخرت کے بھی قائل نہیں

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

جو زکوٰة نہیں دیتے اورآخرت کے بھی منکر ہی رہتے ہیں

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

جو زکوٰۃ ادا نہیں کرتے اور وہ قیامت کے منکر ہیں۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

جو لوگ زکوِٰادا نہیں کرتے ہیں اور آخرت کا انکار کرنے والے ہیں

طاہر القادری Tahir ul Qadri

جو زکوٰۃ ادا نہیں کرتے اور وہی تو آخرت کے بھی منکر ہیں،