Skip to main content

يَوْمَ يَسْمَعُوْنَ الصَّيْحَةَ بِالْحَـقِّ ۗ ذٰلِكَ يَوْمُ الْخُـرُوْجِ

يَوْمَ
جس دن
يَسْمَعُونَ
سنیں گے
ٱلصَّيْحَةَ
شیخ کو
بِٱلْحَقِّۚ
حق کے ساتھ
ذَٰلِكَ
یہ
يَوْمُ
(ہے) دن
ٱلْخُرُوجِ
نکلنے کا

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

جس دن سب لوگ آوازۂ حشر کو ٹھیک ٹھیک سن رہے ہوں گے، وہ زمین سے مُردوں کے نکلنے کا دن ہو گا

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

جس دن سب لوگ آوازۂ حشر کو ٹھیک ٹھیک سن رہے ہوں گے، وہ زمین سے مُردوں کے نکلنے کا دن ہو گا

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

جس دن چنگھاڑ سنیں گے حق کے ساتھ، یہ دن ہے قبروں سے باہر آنے کا،

احمد علی Ahmed Ali

جس دن وہ ایک چیخ کو بخوبی سنیں گے یہ دن قبروں سے نکلنے کا ہوگا

أحسن البيان Ahsanul Bayan

جس روز اس تند تیز چیخ کو یقین کے ساتھ سن لیں گے یہ دن ہوگا نکلنے کا (١)

٤٢۔١ یعنی یہ چیخ یعنی نفخہ قیامت یقینا ہوگا جس میں یہ دنیا میں شک کرتے تھے۔ اور یہی دن قبروں سے زندہ ہو کر نکلنے کا ہوگا۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

جس دن لوگ چیخ یقیناً سن لیں گے۔ وہی نکل پڑنے کا دن ہے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

جس روز اس تند وتیز چیﺦ کو یقین کے ساتھ سن لیں گے، یہ دن ہوگا نکلنے کا

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

جس دن سب لوگ ایک زوردار آواز کو بالیقین سنیں گے وہی دن (قبروں سے) نکلنے کا ہوگا۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

جس دن صدائے آسمان کو سب بخوبی سن لیں گے اور وہی دن قبروں سے نکلنے کا دن ہے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

جس دن لوگ سخت چنگھاڑ کی آواز کو بالیقین سنیں گے، یہی قبروں سے نکلنے کا دن ہوگا،