Skip to main content

فَاَخَذَتْهُمُ الرَّجْفَةُ فَاَصْبَحُوْا فِىْ دَارِهِمْ جٰثِمِيْنَ

فَأَخَذَتْهُمُ
پس پکڑ لیا ان کو
ٱلرَّجْفَةُ
زلزلے نے
فَأَصْبَحُوا۟
تو وہ ہوگئے
فِى
میں
دَارِهِمْ
اپنے گھروں میں
جَٰثِمِينَ
اوندھے منہ گرنے والے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

آخر کا ر ایک دہلا دینے والی آفت نے اُنہیں آ لیا اور وہ اپنے گھروں میں اوندھے پڑے کے پڑے رہ گئے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

آخر کا ر ایک دہلا دینے والی آفت نے اُنہیں آ لیا اور وہ اپنے گھروں میں اوندھے پڑے کے پڑے رہ گئے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

تو انہیں زلزلے نے ا ٓلیا تو صبح کو اپنے گھروں میں اوندھے پڑے رہ گئے،

احمد علی Ahmed Ali

پس انہیں زلزلہ نے آ پکڑا پھر صبح کو اپنے گھروں میں اوندھے پڑے ہوئے رہ گئے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

پس ان کو زلزلہ نے آپکڑا (١) اور وہ اپنے گھروں میں اوندھے اوندھے پڑے رہ گئے۔

٧٨۔١ یہاں رَجْفَہ،ُ (زلزلے) کا ذکر ہے۔ دوسرے مقام پر صَیْحَۃ،ُ،ُ (چیخ) کا۔ جس سے معلوم ہوتا ہے کہ یہ دونوں قسم کا عذاب ان پر آیا۔ اوپر سے سخت چیخ اور نیچے سے زلزلہ۔ ان دونوں عذابوں نے انہیں تہس نہس کرکے رکھ دیا۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

تو ان کو بھونچال نے آ پکڑا اور وہ اپنے گھروں میں اوندھے پڑے رہ گئے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

پس ان کو زلزلہ نے آپکڑا اور وه اپنے گھروں میں اوندھے کے اوندھے پڑے ره گئے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

پس انہیں زلزلہ نے آپکڑا اور وہ اپنے گھروں میں اوندھے پڑے رہ گئے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

تو انہیں زلزلہ نے اپنی گرفت میں لے لیاکہ اپنے گھر ہی میں سربہ زانو رہ گئے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

سو انہیں سخت زلزلہ (کے عذاب) نے آپکڑا پس وہ (ہلاک ہو کر) صبح اپنے گھروں میں اوندھے پڑے رہ گئے،