Skip to main content

وَيُسْقَوْنَ فِيْهَا كَأْسًا كَانَ مِزَاجُهَا زَنْجَبِيْلًا ۚ

وَيُسْقَوْنَ
اور وہ پلائے جائیں گے
فِيهَا
اس میں
كَأْسًا
ایک جام
كَانَ
ہوگی اس میں
مِزَاجُهَا
آمیزش۔ ملاوٹ
زَنجَبِيلًا
زنجیل کی۔ سونٹھ کی

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

ان کو وہاں ایسی شراب کے جام پلائے جائیں گے جس میں سونٹھ کی آمیزش ہوگی

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

ان کو وہاں ایسی شراب کے جام پلائے جائیں گے جس میں سونٹھ کی آمیزش ہوگی

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

اور اس میں وہ جام پلائے جائیں گے جس کی ملونی ادرک ہوگی

احمد علی Ahmed Ali

اورانہیں وہاں ایسی شراب کا پیالہ پلایا جائے گا جس میں سونٹھ کی آمیزش ہو گی

أحسن البيان Ahsanul Bayan

اور انہیں وہاں وہ جام پلائے جائیں گے جن کی آمیزش زنجبیل کی ہوگی (١)

١٧۔١ زَ نْجَبِیْل (سونٹھ، خشک ادرک) کو کہتے ہیں۔ یہ گرم ہوتی ہے اس کی آمیزش سے ایک خوشگوار تلخی پیدا ہو جاتی ہے۔ علاوہ ازیں عربوں کی یہ مرغوب چیز ہے۔ چنانچہ ان کے قہوہ میں بھی زنجبیل شامل ہوتی ہے۔ مطلب یہ ہے کہ جنت میں ایک وہ شراب ہوگی جو ٹھنڈی ہوگی جس میں کافور کی آمیزش ہوگی اور دوسری شراب گرم، جس میں زنجبیل کی ملاوٹ ہوگی۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اور وہاں ان کو ایسی شراب (بھی) پلائی جائے گی جس میں سونٹھ کی آمیزش ہوگی

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

اور انہیں وہاں وه جام پلائے جائیں گے جن کی آمیزش زنجبیل کی ہوگی

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

اور انہیں ایسی شرابِ طہور کے جام پلائے جائیں گے جن میں زنجیل (سونٹھ کے پانی) کی آمیزش ہوگی۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

یہ وہاں ایسے پیالے سے سیراب کئے جائیں گے جس میں زنجبیل کی آمیزش ہوگی

طاہر القادری Tahir ul Qadri

اور انہیں وہاں (شرابِ طہور کے) ایسے جام پلائے جائیں گے جن میں زنجبیل کی آمیزش ہوگی،