Skip to main content

فَذُوْقُوْا فَلَنْ نَّزِيْدَكُمْ اِلَّا عَذَابًا

فَذُوقُوا۟
پس چکھو
فَلَن
پس ہرگز نہ
نَّزِيدَكُمْ
ہم زیادہ دیں گے تم کو
إِلَّا
مگر
عَذَابًا
عذاب

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اب چکھو مزہ، ہم تمہارے لیے عذاب کے سوا کسی چیز میں ہرگز اضافہ نہ کریں گے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اب چکھو مزہ، ہم تمہارے لیے عذاب کے سوا کسی چیز میں ہرگز اضافہ نہ کریں گے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

اب چکھو کہ ہم تمہیں نہ بڑھائیں گے مگر عذاب،

احمد علی Ahmed Ali

پس چکھو سو ہم تمہارے لیے عذاب ہی زیادہ کرتے رہیں گے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

اب تم (اپنے کئے کا) مزہ چکھو ہم تمہارا عذاب ہی بڑھاتے رہیں گے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

سو (اب) مزہ چکھو۔ ہم تم پر عذاب ہی بڑھاتے جائیں گے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

اب تم (اپنے کیے کا) مزه چکھو ہم تمہارا عذاب ہی بڑھاتے رہیں گے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

چکھو اس کامزہ ہم تمہارے عذاب میں اضافہ ہی کریں گے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اب تم اپنے اعمال کا مزہ چکھو اورہم عذاب کے علاوہ کوئی اضافہ نہیں کرسکتے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

(اے منکرو!) اب تم (اپنے کئے کا) مزہ چکھو (تم دنیا میں کفر و سرکشی میں بڑھتے گئے) اب ہم تم پر عذاب ہی کو بڑھاتے جائیں گے،