Skip to main content

وَاَمَّا مَنْ خَافَ مَقَامَ رَبِّهٖ وَ نَهَى النَّفْسَ عَنِ الْهَوٰىۙ

وَأَمَّا
اور رہا
مَنْ
وہ جو
خَافَ
ڈرا
مَقَامَ
کھڑے ہونے سے
رَبِّهِۦ
اپنے رب کے سامنے
وَنَهَى
اور روکا اس نے
ٱلنَّفْسَ
نفس کو
عَنِ
سے
ٱلْهَوَىٰ
خواہشات (سے)

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اور جس نے اپنے رب کے سامنے کھڑے ہونے کا خوف کیا تھا اور نفس کو بری خواہشات سے باز رکھا تھا

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اور جس نے اپنے رب کے سامنے کھڑے ہونے کا خوف کیا تھا اور نفس کو بری خواہشات سے باز رکھا تھا

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

اور وہ جو اپنے رب کے حضور کھڑے ہونے سے ڈرا اور نفس کو خواہش سے روکا

احمد علی Ahmed Ali

اور لیکن جو اپنے رب کے سامنے کھڑا ہونے سے ڈرتارہا اور اس نے اپنے نفس کو بری خواہش سے روکا

أحسن البيان Ahsanul Bayan

ہاں جو شخص اپنے رب کے سامنے کھڑے ہونے (١) سے ڈرتا رہا ہوگا اور اپنے نفس کو خواہش سے روکا ہوگا۔

٤٠۔١ کہ اگر میں نے گناہ اور اللہ کی نافرمانی کی تو مجھے اللہ سے بچانے والا کوئی نہیں ہوگا، اس لئے وہ گناہوں سے اجتناب کرتا رہا ہو۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اور جو اپنے پروردگار کے سامنے کھڑے ہونے سے ڈرتا اور جی کو خواہشوں سے روکتا رہا

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

ہاں جو شخص اپنے رب کے سامنے کھڑے ہونے سے ڈرتا رہا ہوگا اور اپنے نفس کو خواہش سے روکا ہوگا

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

اور جو شخص اپنے پروردگار کی بارگاہ میں حاضری سے ڈرتا رہا ہوگا اور (اپنے) نفس کو (اس کی) خواہش سے روکا ہوگا۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اور جس نے رب کی بارگاہ میں حاضری کا خوف پیدا کیا ہے اور اپنے نفس کو خواہشات سے روکا ہے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

اور جو شخص اپنے رب کے حضور کھڑا ہونے سے ڈرتا رہا اور اُس نے (اپنے) نفس کو (بری) خواہشات و شہوات سے باز رکھا،