Skip to main content

قَالَ مَوْعِدُكُمْ يَوْمُ الزِّيْنَةِ وَاَنْ يُّحْشَرَ النَّاسُ ضُحًى

قَالَ
کہا
مَوْعِدُكُمْ
تمہارا مقرر وقت
يَوْمُ
دن ہے
ٱلزِّينَةِ
جشن کا
وَأَن
اور یہ کہ
يُحْشَرَ
اکٹھے کیے جائیں گے
ٱلنَّاسُ
لوگ
ضُحًى
دن چڑھے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

موسیٰؑ نے کہا "جشن کا دن طے ہوا، ا ور دن چڑھے لوگ جمع ہوں"

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

موسیٰؑ نے کہا "جشن کا دن طے ہوا، ا ور دن چڑھے لوگ جمع ہوں"

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

موسیٰ نے کہا تمہارا وعدہ میلے کا دن ہے اور یہ کہ لوگ دن چڑھے جمع کیے جائیں

احمد علی Ahmed Ali

کہا تمہارا وعدہ جشن کا دن ہے اور دن چڑھے لوگ اکھٹے کیے جائیں

أحسن البيان Ahsanul Bayan

موسیٰ (علیہ السلام) نے جواب دیا کہ زینت اور جشن کے دن (١) کا وعدہ ہے اور یہ کہ لوگ دن چڑھے ہی جمع ہوجائیں

٥٩۔١ اس سے مراد نو روز یا کوئی اور سالانہ میلے یا جشن کا دن ہے جسے وہ عید کے طور پر مناتے تھے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

موسیٰ نے کہا آپ کے لئے (مقابلے کا) دن نو روز (مقرر کیا جاتا ہے) اور یہ کہ لوگ اس دن چاشت کے وقت اکھٹے ہوجائیں

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

موسیٰ (علیہ السلام) نے جواب دیا کہ زینت اور جشن کے دن کا وعده ہے اور یہ کہ لوگ دن چڑھے ہی جمع ہو جائیں

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

موسیٰ نے کہا تمہارے لئے وعدہ کا دن جشن والا دن ہے اور یہ کہ دن چڑھے لوگ جمع کر لئے جائیں۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

موسٰی نے کہا کہ تمہارا وعدہ کا دن زینت (عید) کا دن ہے اور اس دن تمام لوگ وقت چاشت اکٹھا کئے جائیں گے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

(موسٰی علیہ السلام نے) فرمایا: تمہارے وعدے کا دن یومِ عید (سالانہ جشن کا دن) ہے اور یہ کہ (اس دن) سارے لوگ چاشت کے وقت جمع ہوجائیں،