Skip to main content

ثُمَّ جَعَلْنٰهُ نُطْفَةً فِىْ قَرَارٍ مَّكِيْنٍۖ

ثُمَّ
پھر
جَعَلْنَٰهُ
بنایا ہم نے اس کو۔ بناکر رکھا ہم نے اس کو
نُطْفَةً
ایک نطفے کی شکل میں
فِى
میں
قَرَارٍ
ایک ٹھکانے میں
مَّكِينٍ
محفوظ

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

پھر اسے ایک محفوظ جگہ ٹپکی ہوئی بوند میں تبدیل کیا

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

پھر اسے ایک محفوظ جگہ ٹپکی ہوئی بوند میں تبدیل کیا

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

پھر اسے پانی کی بوند کیا ایک مضبوط ٹھہراؤ میں

احمد علی Ahmed Ali

پھر ہم نے حفاظت کی جگہ میں نطفہ بنا کر رکھا

أحسن البيان Ahsanul Bayan

پھر اسے نطفہ بنا کر محفوظ جگہ میں قرار دے دیا (١)۔

١٣۔١ محفوظ جگہ سے مراد رحم مادر ہے، جہاں نو مہینے بچہ بڑی حفاظت سے رہتا اور پرورش پاتا ہے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

پھر اس کو ایک مضبوط (اور محفوظ) جگہ میں نطفہ بنا کر رکھا

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

پھر اسے نطفہ بنا کر محفوظ جگہ میں قرار دے دیا

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

پھر ہم نے اسے نطفہ کی صورت میں ایک محفوظ مقام (رحم) میں رکھا۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

پھر اسے ایک محفوظ جگہ پر نطفہ بناکر رکھا ہے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

پھر اسے نطفہ (تولیدی قطرہ) بنا کر ایک مضبوط جگہ (رحمِ مادر) میں رکھا،