Skip to main content

اِنِّىْۤ اَخَافُ عَلَيْكُمْ عَذَابَ يَوْمٍ عَظِيْمٍۗ

إِنِّىٓ
بیشک میں
أَخَافُ
میں ڈرتا ہوں
عَلَيْكُمْ
تم پر
عَذَابَ
عذاب سے
يَوْمٍ
دن کے
عَظِيمٍ
بڑے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

مجھے تمہارے حق میں ایک بڑے دن کے عذاب کا ڈر ہے"

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

مجھے تمہارے حق میں ایک بڑے دن کے عذاب کا ڈر ہے"

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

بیشک مجھے تم پر ڈر ہے ایک بڑے دن کے عذاب کا

احمد علی Ahmed Ali

میں تم پر ایک بڑے دن کے عذاب سے ڈرتا ہوں

أحسن البيان Ahsanul Bayan

مجھے تو تمہاری نسبت بڑے دن کے عذاب کا اندیشہ ہے (١)۔

١٣٥۔١ یعنی اگر تم نے اپنے کفر پر اصرار جاری رکھا اور اللہ تعالٰی نے تمہیں جو نعمتیں عطا فرمائی ہیں، ان کا شکر ادا نہ کیا، تو تم عذاب الٰہی کے مستحق قرار پا جاؤ گے۔ یہ عذاب دنیا میں بھی آسکتا ہے اور آخرت تو ہے ہی عذاب و ثواب کے لئے۔ وہاں تو عذاب سے چھٹکارا ممکن ہی نہیں ہوگا۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

مجھ کو تمہارے بارے میں بڑے (سخت) دن کے عذاب کا خوف ہے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

مجھے تو تمہاری نسبت بڑے دن کےعذاب کا اندیشہ ہے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

میں تمہارے متعلق ایک بہت بڑے (سخت) دن کے عذاب سے ڈرتا ہوں۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

میں تمہارے بارے میں بڑے سخت دن کے عذاب سے خوفزدہ ہوں

طاہر القادری Tahir ul Qadri

بیشک میں تم پر ایک زبردست دن کے عذاب کا خوف رکھتا ہوں،