Skip to main content

اَتَأْتُوْنَ الذُّكْرَانَ مِنَ الْعٰلَمِيْنَۙ

أَتَأْتُونَ
کیا تم آتے ہو
ٱلذُّكْرَانَ
مردوں کے پاس
مِنَ
میں سے
ٱلْعَٰلَمِينَ
جہان والوں

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

کیا تم دنیا کی مخلوق میں سے مَردوں کے پاس جاتے ہو

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

کیا تم دنیا کی مخلوق میں سے مَردوں کے پاس جاتے ہو

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

کیا مخلوق میں مردوں سے بدفعلی کرتے ہو

احمد علی Ahmed Ali

کیا تم دنیا کے لوگوں میں لڑکوں پر گرے پڑتے ہو

أحسن البيان Ahsanul Bayan

کیا تم جہان والوں میں سے مردوں کے ساتھ شہوت رانی کرتے ہو۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

کیا تم اہل عالم میں سے لڑکوں پر مائل ہوتے ہو

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

کیا تم جہان والوں میں سے مردوں کے ساتھ شہوت رانی کرتے ہو

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

کیا تم دنیا جہان والوں میں سے (بدفعلی کیلئے) مَردوں کے پاس ہی جاتے ہو۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

کیا تم لوگ ساری دنیا میں صرف مُردوں ہی سے جنسی تعلقات پیدا کرتے ہو

طاہر القادری Tahir ul Qadri

کیا تم سارے جہان والوں میں سے صرف مَردوں ہی کے پاس (اپنی شہوانی خواہشات پوری کرنے کے لئے) آتے ہو،

تفسير ابن كثير Ibn Kathir

ہم جنسی پرستی کا شکار
لوط نبی (علیہ السلام) نے اپنی قوم کو انکی خاص بدکاری سے روکا کہ تم مردوں کے پاس شہوت سے نہ آؤ۔ ہاں اپنی حلال بیویوں سے اپنی خواہش پوری کر جنہیں اللہ نے تمہارے لئے جوڑا بنادیا ہے۔ رب کی مقرر حدوں کا ادب و احترام کرو۔ اس کا جواب ان کے پاس یہی تھا کہ اے لوط (علیہ السلام) اگر تو باز نہ آیا تو ہم تجھے جلا وطن کردیں گے انہوں نے آپس میں مشورہ کیا کہ ان پاکبازوں لوگوں کو تو الگ کردو۔ یہ دیکھ کر آپ نے ان سے بیزاری اور دست برداری کا اعلان کردیا۔ اور فرمایا کہ میں تمہارے اس برے کام سے ناراض ہوں میں اسے پسند نہیں کرتا میں اللہ کے سامنے اپنی برات کا اظہار کرتا ہوں۔ پھر اللہ سے ان کی لئے بددعا کی اور اپنی اور اپنے گھرانے کی نجات طلب کی۔ اللہ تعالیٰ نے سب کو نجات دی مگر آپ کی بیوی نے اپنی قوم کا ساتھ دیا اور انہی کے ساتھ تباہ ہوئی جیسے کہ سورة اعراف، سورة ہود اور سورة حجر میں بالتفصیل بیان گزر چکا ہے۔ آپ اپنے والوں کو لے کر اللہ کے فرمان کے مطابق اس بستی سے چل کھڑے ہوئے حکم تھا کہ آپ کے نکلتے ہی ان پر عذاب آئے گا اس وقت پلٹ کر ان کی طرف دیکھنا بھی نہیں۔ پھر ان سب پر عذاب برسا اور سب برباد کردئیے گئے۔ ان پر آسمان سے سنگ باری ہوئی۔ اور انکا انجام بد ہوا۔ یہ بھی عبرتناک واقعہ ہے ان میں سے بھی اکثر بےایمان تھے۔ رب کے غلبے میں اس کے رحم میں کوئی شک نہیں۔