Skip to main content

وَبِالَّيْلِۗ اَفَلَا تَعْقِلُوْنَ

وَبِٱلَّيْلِۗ
اور رات کو
أَفَلَا
کیا تم
تَعْقِلُونَ
عقل نہیں رکھتے ہو

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

کیا تم کو عقل نہیں آتی؟

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

کیا تم کو عقل نہیں آتی؟

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

اور رات میں تو کیا تمہیں عقل نہیں

احمد علی Ahmed Ali

اور رات میں بھی پس کیا تم عقل نہیں رکھتے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

اور رات کو بھی، کیا پھر بھی نہیں سمجھتے؟ (١)۔

١٣٨۔١ یہ اہل مکہ سے خطاب ہے جو تجارتی سفر میں ان تباہ شدہ علاقوں سے آتے جاتے، گزرتے تھے ان کو کہا جارہا ہے کہ تم صبح کے وقت بھی اور رات کے وقت بھی ان بستیوں سے گزرتے ہو، جہاں اب مردار بحیرہ ہے، جو دیکھنے میں بھی نہایت کریہ ہے اور سخت متعفن اور بدبودار۔ کیا تم انہیں دیکھ کر یہ بات نہیں سمجھتے کہ رسولوں کے جھٹلانے کی وجہ سے ان کا یہ بد انجام ہوا، تو تمہاری اس روش کا انجام بھی اس سے مختلف کیوں کر ہوگا؟ جب تم بھی وہی کام کر رہے ہو، جو انہوں نے کیا تو پھر اللہ کے عذاب سے کیوں کر محفوظ رہو گے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اور رات کو بھی۔ تو کیا تم عقل نہیں رکھتے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

اور رات کو بھی، کیا پھر بھی نہیں سمجھتے؟

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

اور شام کو بھی کیا پھر بھی عقل سے کام نہیں لیتے؟

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اور رات کے وقت بھی تو کیا تمہیں عقل نہیں آرہی ہے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

اور رات کو بھی، کیا پھر بھی تم عقل نہیں رکھتے،