Skip to main content

وَاِنَّكُمْ لَتَمُرُّوْنَ عَلَيْهِمْ مُّصْبِحِيْنَۙ

وَإِنَّكُمْ
اور بیشک تم
لَتَمُرُّونَ
البتہ تم گزرتے ہو
عَلَيْهِم
ان پر
مُّصْبِحِينَ
صبح کرتے ہوئے/ صبح صبح

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

آج تم شب و روز اُن کے اجڑے دیار پر سے گزرتے ہو

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

آج تم شب و روز اُن کے اجڑے دیار پر سے گزرتے ہو

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

او ربیشک تم ان پر گزرتے ہو صبح کو،

احمد علی Ahmed Ali

اور بے شک تم ان کے پاس سے صبح کے وقت گزرتے ہو

أحسن البيان Ahsanul Bayan

اور تم تو صبح ہونے پر ان کی بستیوں کے پاس سے گزرتے ہو۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اور تم دن کو بھی ان (کی بستیوں) کے پاس سے گزرتے رہتے ہو

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

اور تم تو صبح ہونے پر ان کی بستیوں کے پاس سے گزرتے ہو

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

اور تم لوگ صبح بھی ان (کی ویران شدہ بستیوں) پر سے گزرتے ہو۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

تم ان کی طرف سے برابر صبح کو گزرتے رہتے ہو

طاہر القادری Tahir ul Qadri

اور بے شک تم لوگ اُن (کی اُجڑی بستیوں) پر (مَکّہ سے ملکِ شام کی طرف جاتے ہوئے) صبح کے وقت بھی گزرتے ہو،