Skip to main content

فَاَخَذْنٰهُ وَجُنُوْدَهٗ فَنَبَذْنٰهُمْ فِى الْيَمِّ وَهُوَ مُلِيْمٌۗ

فَأَخَذْنَٰهُ
تو پکڑ لیا ہم نے اس کو
وَجُنُودَهُۥ
اور اس کے لشکروں کو
فَنَبَذْنَٰهُمْ
تو پھینک دیا ہم نے ان کو
فِى
میں
ٱلْيَمِّ
سمندر
وَهُوَ
اور وہ
مُلِيمٌ
ملامت زدہ تھا

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

آخر کار ہم نے اُسے اور اس کے لشکروں کو پکڑا اور سب کو سمندر میں پھینک دیا اور وہ ملامت زدہ ہو کر رہ گیا

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

آخر کار ہم نے اُسے اور اس کے لشکروں کو پکڑا اور سب کو سمندر میں پھینک دیا اور وہ ملامت زدہ ہو کر رہ گیا

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

تو ہم نے اسے اور اس کے لشکر کو پکڑ کر دریا میں ڈال دیا اس حال میں کہ وہ اپنے آپ کو ملامت کررہا تھا

احمد علی Ahmed Ali

پھر ہم نے اسے اور اس کے لشکروں کو پکڑ لیا پھر ہم نے انہیں سمند رمیں پھینک دیا اور اس نے کام ہی ملامت کا کیا تھا

أحسن البيان Ahsanul Bayan

بالآخر ہم نے اسے اور اس کے لشکروں کو اپنے عذاب میں پکڑ کر دریا میں ڈال دیا وہ تھا ملامت کے قابل (١)۔

٤٠۔١ یعنی اس کے کام ہی ایسے تھے کہ جن پر وہ ملامت ہی کا مستحق تھا

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

تو ہم نے اس کو اور اس کے لشکروں کو پکڑ لیا اور ان کو دریا میں پھینک دیا اور وہ کام ہی قابل ملامت کرتا تھا

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

بالﺂخر ہم نے اسے اور اس کے لشکروں کو اپنے عذاب میں پکڑ کر دریا میں ڈال دیا وه تھا ہی ملامت کے قابل

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

انجامِ کار ہم نے اسے اور اس کے لشکر کو پکڑا اور سب کو سمندر میں پھینک دیا درآنحالیکہ وہ قابلِ ملامت تھا۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

تو ہم نے اسے اور اس کی فوج کو گرفت میں لے کر دریا میں ڈال دیا اور وہ قابل ملامت تھا ہی

طاہر القادری Tahir ul Qadri

پھر ہم نے اُسے اور اُس کے لشکر کو (عذاب کی) گرفت میں لے لیا اور اُن (سب) کو دریا میں غرق کر دیا اور وہ تھا ہی قابلِ ملامت کام کرنے والا،