Skip to main content

خُشَّعًا اَبْصَارُهُمْ يَخْرُجُوْنَ مِنَ الْاَجْدَاثِ كَاَنَّهُمْ جَرَادٌ مُّنْتَشِرٌۙ

خُشَّعًا
جھکی ہوئی ہوں گی
أَبْصَٰرُهُمْ
ان کی نگاہیں
يَخْرُجُونَ
نکلیں گے
مِنَ
سے
ٱلْأَجْدَاثِ
قبروں
كَأَنَّهُمْ
گویا کہ وہ
جَرَادٌ
ٹڈیاں ہیں
مُّنتَشِرٌ
پھیلی ہوئیں

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

لوگ سہمی ہوئی نگاہوں کے ساتھ اپنی قبروں سے اِس طرح نکلیں گے گویا وہ بکھری ہوئی ٹڈیاں ہیں

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

لوگ سہمی ہوئی نگاہوں کے ساتھ اپنی قبروں سے اِس طرح نکلیں گے گویا وہ بکھری ہوئی ٹڈیاں ہیں

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

نیچی آنکھیں کیے ہوئے قبروں سے نکلیں گے گویا وہ ٹڈی ہیں پھیلی ہوئی

احمد علی Ahmed Ali

اپنی آنکھیں نیچے کیے ہوئے قبروں سے نکل پڑیں گے جیسے ٹڈیاں پھیل پڑی ہوں

أحسن البيان Ahsanul Bayan

یہ جھکی آنکھوں قبروں سے اس طرح نکل کھڑے ہونگے کہ گویا وہ پھیلا ہوا ٹڈی دل ہے (١)۔

٧۔١ یعنی قبروں سے نکل کر وہ اس طرح پھیلیں گے اور موقف حساب کی طرف اس طرح نہایت تیزی سے جائیں گے، گویا ٹڈی دل ہے جو آنا فانا میں کشادہ فضا میں پھیل جاتا ہے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

تو آنکھیں نیچی کئے ہوئے قبروں سے نکل پڑیں گے گویا بکھری ہوئی ٹڈیاں

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

یہ جھکی آنکھوں قبروں سے اس طرح نکل کھڑے ہوں گے کہ گویا وه پھیلا ہوا ٹڈی دل ہے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

(شدتِ خوف سے) آنکھیں جھکائے ہوئے قبروں سے یوں نکل پڑیں گے کہ گویا بکھری ہوئی ہڈیاں ہیں۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

یہ نظریں جھکائے ہوئے قبروں سے اس طرح نکلیں گے جس طرح ٹڈیاں پھیلی ہوئی ہوں

طاہر القادری Tahir ul Qadri

اپنی آنکھیں جھکائے ہوئے قبروں سے نکل پڑیں گے گویا وہ پھیلی ہوئی ٹڈیاں ہیں،