Skip to main content

اِنَّا سَنُلْقِىْ عَلَيْكَ قَوْلًا ثَقِيْلًا

إِنَّا
بیشک ہم
سَنُلْقِى
عنقریب ہم ڈالیں گے
عَلَيْكَ
آپ پر
قَوْلًا
بات۔
ثَقِيلًا
بھاری ۔ بوجھل

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

ہم تم پر ایک بھاری کلام نازل کرنے والے ہیں

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

ہم تم پر ایک بھاری کلام نازل کرنے والے ہیں

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

بیشک عنقریب ہم تم پر ایک بھاری بات ڈالیں گے

احمد علی Ahmed Ali

ہم عنقریب آپ پر ایک بھاری بات کا (بوجھ) ڈالنے والے ہیں

أحسن البيان Ahsanul Bayan

یقیناً ہم تجھ پر بہت بھاری بات عنقریب نازل کریں گے (١)

٥۔١ رات کا قیام چونکہ نفس انسانی کے لئے بالعموم گراں ہے، اس لئے یہ جملہ خاص طور پر فرمایا کہ ہم اس سے بھی بھاری بات تجھ پر نازل کریں گے، یعنی، قرآن، جس کے احکام و فرائض پر عمل، اس کی حدود کی پابندی اور اس کی تبلیغ اور دعوت، ایک بھاری جانفسانی کا عمل ہے۔ بعض نے ثقالت سے وہ بوجھ مراد لیا ہے جو وحی کے وقت نبی صلی اللہ علیہ وسلم پر پڑتا تھا جس سے سخت سردی میں بھی آپ پسینے سے شرابور ہو جاتے تھے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

ہم عنقریب تم پر ایک بھاری فرمان نازل کریں گے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

یقیناً ہم تجھ پر بہت بھاری بات عنقریب نازل کریں گے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

بےشک ہم آپ(ص) پر ایک بھاری کلام ڈالنے والے ہیں۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

ہم عنقریب تمہارے اوپر ایک سنگین حکم نازل کرنے والے ہیں

طاہر القادری Tahir ul Qadri

ہم عنقریب آپ پر ایک بھاری فرمان نازل کریں گے،