Skip to main content

بَلِ الْاِنْسَانُ عَلٰى نَفْسِهٖ بَصِيْرَةٌ ۙ

بَلِ
بلکہ
ٱلْإِنسَٰنُ
انسان
عَلَىٰ
پر
نَفْسِهِۦ
اپنی ذات
بَصِيرَةٌ
دیکھنے والا ہے۔ آگاہ ہے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

بلکہ انسان خود ہی اپنے آپ کو خوب جانتا ہے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

بلکہ انسان خود ہی اپنے آپ کو خوب جانتا ہے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

بلکہ آدمی خود ہی اپنے حال پر پوری نگاہ رکھتا ہے،

احمد علی Ahmed Ali

بلکہ انسان اپنے اوپر خود شاہد ہے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

بلکہ انسان خود اپنے اوپر حجت ہے (١)۔

١٤۔١ یعنی اس کے اپنے ہاتھ، پاؤں، زبان اور دیگر اعضاء گواہی دیں گے، یا یہ مطلب ہے کہ انسان اپنے عیوب خود جانتا ہے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

بلکہ انسان آپ اپنا گواہ ہے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

بلکہ انسان خود اپنے اوپر آپ حجت ہے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

بلکہ خود انسان اپنے حال کو خوب جانتا ہے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

بلکہ انسان خود بھی اپنے نفس کے حالات سے خوب باخبر ہے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

بلکہ اِنسان اپنے (اَحوالِ) نفس پر (خود ہی) آگاہ ہوگا،