Skip to main content

لَتَرْكَبُنَّ طَبَقًا عَنْ طَبَقٍۗ

لَتَرْكَبُنَّ
البتہ تم ضرور سوار ہوگے
طَبَقًا
ایک حالت پر
عَن
سے
طَبَقٍ
دوسری حالت(سے)

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

تم کو ضرور درجہ بدرجہ ایک حالت سے دوسری حالت کی طرف گزرتے چلے جانا ہے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

تم کو ضرور درجہ بدرجہ ایک حالت سے دوسری حالت کی طرف گزرتے چلے جانا ہے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

ضرور تم منزل بہ منزل چڑھو گے

احمد علی Ahmed Ali

کہ تمہیں ایک منزل سے دوسری منزل پر چڑھنا ہوگا

أحسن البيان Ahsanul Bayan

یقیناً تم ایک حالت سے دوسری حالت میں پہنچوگے (١)

١٩۔١ یہاں مراد شدائد ہیں جو قیامت والے دن واقع ہونگے۔ یعنی اس روز ایک سے بڑھ کر ایک حالت طاری ہوگی (یہ جواب قسم ہے)

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

کہ تم درجہ بدرجہ (رتبہٴ اعلیٰ پر) چڑھو گے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

یقیناً تم ایک حالت سے دوسری حالت پر پہنچو گے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

تمہیں یونہی (تدریجاً) زینہ بہ زینہ چڑھنا ہے (اور ایک ایک منزل طے کرنی ہے)۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

کہ تم ایک مصیبت کے بعد دوسری مصیبت میں مبتلا ہوگے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

تم یقیناً طبق در طبق ضرور سواری کرتے ہوئے جاؤ گے،