Skip to main content

فَمَا لَهٗ مِنْ قُوَّةٍ وَّلَا نَاصِرٍۗ

فَمَا
تو نہیں ہوگی
لَهُۥ
اس کے لئے
مِن
کوئی
قُوَّةٍ
قوت
وَلَا
اور نہ
نَاصِرٍ
کوئی مددگار

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اُس وقت انسان کے پاس نہ خود اپنا کوئی زور ہوگا اور نہ کوئی اس کی مدد کرنے والا ہوگا

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اُس وقت انسان کے پاس نہ خود اپنا کوئی زور ہوگا اور نہ کوئی اس کی مدد کرنے والا ہوگا

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

تو آدمی کے پاس نہ کچھ زور ہوگا نہ کوئی مددگار

احمد علی Ahmed Ali

تو اس کے لیے نہ کوئی طاقت ہو گی اور نہ کوئی مددگار

أحسن البيان Ahsanul Bayan

تو نہ ہوگا اس کے پاس کچھ زور نہ مددگار۔ (۱)

۱۰۔۱یعنی خود انسان کے پاس اتنی قوت نہ ہوگی کہ وہ خدا کے عذاب سے بچ جائے نہ کسی اور طرف اس کو کوئی ایسا مددگار مل سکے گا جو اس کو اللہ کے عذاب سے بچا دے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

تو انسان کی کچھ پیش نہ چل سکے گی اور نہ کوئی اس کا مددگار ہو گا

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

تو نہ ہوگا اس کے پاس کچھ زور نہ مدددگار

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

پس اس وقت نہ خود انسان کے پاس کوئی طاقت ہوگی اور نہ کوئی مددگار ہوگا۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

تو پھر نہ کسی کے پاس قوت ہوگی اور نہ مددگار

طاہر القادری Tahir ul Qadri

پھر انسان کے پاس نہ (خود) کوئی قوت ہوگی اور نہ کوئی (اس کا) مددگار ہوگا،