Skip to main content

هٰذَا ۙ فَلْيَذُوْقُوْهُ حَمِيْمٌ وَّغَسَّاقٌ ۙ

هَٰذَا
یہ ہے (یہ بات)
فَلْيَذُوقُوهُ
پس ضرور وہ چکھیں گے اس کو
حَمِيمٌ
جو کھولتا ہوا پانی ہے
وَغَسَّاقٌ
اور پیپ لہو ہے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

یہ ہے اُن کے لیے، پس وہ مزا چکھیں کھولتے ہوئے پانی اور پیپ لہو

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

یہ ہے اُن کے لیے، پس وہ مزا چکھیں کھولتے ہوئے پانی اور پیپ لہو

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

ان کو یہ ہے تو اسے چکھیں کھولتا پانی اور پیپ

احمد علی Ahmed Ali

یہ ہے پھر وہ اس کو چکھیں جو کھولتا ہوا پانی اور پیپ ہے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

یہ ہے، پس اسے چکھیں، گرم پانی اور پیپ (١)

٥٧۔١ یہ ہے پینے گرم پانی اور پیپ، اسے چکھو، گرم کھولتا ہو پانی، جو ان کی آنتوں کو کاٹ ڈالے گا، جہنمیوں کی کھالوں سے جو پیپ اور گندا لہو نکلے گا یا نہایت ٹھنڈا پانی، جس کا پینا نہایت مشکل ہوگا۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

یہ کھولتا ہوا گرم پانی اور پیپ (ہے) اب اس کے مزے چکھیں

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

یہ ہے، پس اسے چکھیں، گرم پانی اور پیﭗ

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

یہ (حاضر ہے) کھولتا ہوا پانی اور پیپ پس چاہیے کہ وہ اسے چکھیں۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

یہ ہے عذاب اس کا مزہ چکھیں گرم پانی ہے اور پیپ

طاہر القادری Tahir ul Qadri

یہ (عذاب ہے) پس انہیں یہ چکھنا چاہئے کھولتا ہوا پانی ہے اور پیپ ہے،