Skip to main content

وَّعَرَضْنَا جَهَـنَّمَ يَوْمَٮِٕذٍ لِّـلْكٰفِرِيْنَ عَرْضَا ۙ

وَعَرَضْنَا
اور ہم پیش کریں گے
جَهَنَّمَ
جہنم کو
يَوْمَئِذٍ
اس دن
لِّلْكَٰفِرِينَ
کافروں کے لیے
عَرْضًا
پیش کرنا

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اور وہ دن ہوگا جب ہم جہنم کو کافروں کے سامنے لائیں گے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اور وہ دن ہوگا جب ہم جہنم کو کافروں کے سامنے لائیں گے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

اور ہم اس دن جہنم کافروں کے سامنے لائیں گے

احمد علی Ahmed Ali

اور ہم دوزخ کو اس دن کافروں کے سامنے پیش کریں گے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

اس دن ہم جہنم (بھی) کافروں کے سامنے لا کھڑا کر دیں گے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اور اُس روز جہنم کو کافروں کے سامنے لائیں گے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

اس دن ہم جہنم کو (بھی) کافروں کے سامنے ﻻکھڑا کر دیں گے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

اور اس دن ہم دوزخ کو کافروں کے سامنے پیش کر دیں گے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اور اس د ن جہّنم کو کافرین کے سامنے باقاعدہ پیش کیا جائے گا

طاہر القادری Tahir ul Qadri

اور ہم اس دن دوزخ کو کافروں کے سامنے بالکل عیاں کر کے پیش کریں گے،

تفسير ابن كثير Ibn Kathir

جہنم کو دیکھ کر۔
کافر جہنم میں جانے سے پہلے جہنم کو اور اس کے عذاب کو دیکھ لیں گے اور یہ یقین کر کے کہ وہ اسی میں داخل ہونے والے ہیں داخل ہونے سے پہلے ہی جلنے کڑھنے لگیں گے غم ورنج ڈر خوف کے مارے گھلنے لگیں گے۔ صحیح مسلم شریف کی حدیث میں ہے کہ جہنم کو قیامت کے دن گھسیٹ کر لایا جائے گا جس کی ستر ہزار لگامیں ہونگی ہر ایک لگام پر ستر ستر ہزار فرشتے ہوں گے۔ یہ کافر دنیا کی ساری زندگی میں اپنی آنکھوں اور کانوں کے بیکار کئے بیٹھے رہے، نہ حق دیکھا، نہ حق سنا نہ مانا نہ عمل کیا۔ شیطان کا ساتھ دیا اور رحمان کے ذکر سے غفلت برتی۔ اللہ کے احکام اور ممانعت کو پس پشت ڈالے رہے۔ یہی سمجھتے رہے کہ ان کے جھوٹے معبود ہی انہیں سارے نفع پہنچائیں گے اور کل سختیاں دور کریں گے۔ محض غلظ خیال ہے بلکہ وہ تو ان کی عبادت کے بھی منکر ہوجائیں گے اور ان کے دشمن بن کر کھڑے ہوں گے۔ ان کافروں کی منزل تو جہنم ہی ہے جو ابھی سے تیار ہے۔