Skip to main content

اِنْ هِىَ اِلَّا مَوْتَتُنَا الْاُوْلٰى وَمَا نَحْنُ بِمُنْشَرِيْنَ

إِنْ
نہیں
هِىَ
یہ
إِلَّا
مگر
مَوْتَتُنَا
ہماری موت
ٱلْأُولَىٰ
پہلی
وَمَا
اور نہیں
نَحْنُ
ہم
بِمُنشَرِينَ
اٹھائے جانے والے

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

"ہماری پہلی موت کے سوا اور کچھ نہیں اُس کے بعد ہم دوبارہ اٹھائے جانے والے نہیں ہیں

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

"ہماری پہلی موت کے سوا اور کچھ نہیں اُس کے بعد ہم دوبارہ اٹھائے جانے والے نہیں ہیں

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

وہ تو نہیں مگر ہمارا ایک دفعہ کا مرنا اور ہم اٹھائے نہ جائیں گے

احمد علی Ahmed Ali

کہ او رمرنا نہیں ہے مگر یہی ہمارا پہلی بار کا مرنا اور ہم دوبارہ اٹھائے جانے والے نہیں

أحسن البيان Ahsanul Bayan

کہ (آخری چیز) یہی ہمارا پہلی بار (دنیا سے) مر جانا اور ہم (١) دوبارہ اٹھائے نہیں جائیں گے۔

٣٥۔١ یعنی یہ دنیا کی زندگی ہی بس آخری زندگی ہے اس کے بعد دوبارہ زندہ ہونا اور حساب کتاب ہونا ممکن نہیں ہے۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

کہ ہمیں صرف پہلی دفعہ (یعنی ایک بار) مرنا ہے اور (پھر) اُٹھنا نہیں

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

کہ (آخری چیز) یہی ہماری پہلی بار (دنیا سے) مرجانا ہے اور ہم دوباره اٹھائے نہیں جائیں گے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

کہ بس ہماری یہی پہلی موت ہی ہے اس کے بعد ہم (دوبارہ) نہیں اٹھائے جائیں گے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

کہ یہ صرف پہلی موت ہے اور بس اس کے بعد ہم اٹھائے جانے والے نہیں ہیں

طاہر القادری Tahir ul Qadri

کہ ہماری پہلی موت کے سوا (بعد میں) کچھ نہیں ہے اور ہم (دوبارہ) نہیں اٹھائے جائیں گے،