Skip to main content

فَمَا كَانَ دَعْوٰٮهُمْ اِذْ جَاۤءَهُمْ بَأْسُنَاۤ اِلَّاۤ اَنْ قَالُوْۤا اِنَّا كُنَّا ظٰلِمِيْنَ

فَمَا
تو نہ
كَانَ
تھی
دَعْوَىٰهُمْ
پکارا ان کی
إِذْ
جب
جَآءَهُم
آیا ان کے پاس
بَأْسُنَآ
ہمارا عذاب
إِلَّآ
مگر
أَن
یہی کہ
قَالُوٓا۟
انہوں نے کہا
إِنَّا
بیشک ہم
كُنَّا
واقعی تھے ہم
ظَٰلِمِينَ
ظالم

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اور جب ہمارا عذاب اُن پر آ گیا تو ان کی زبان پر اِس کے سوا کوئی صدا نہ تھی کہ واقعی ہم ظالم تھے

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اور جب ہمارا عذاب اُن پر آ گیا تو ان کی زبان پر اِس کے سوا کوئی صدا نہ تھی کہ واقعی ہم ظالم تھے

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

تو ان کے منہ سے کچھ نہ نکلا جب ہمارا عذاب ان پر آیا مگر یہی بولے کہ ہم ظالم تھے

احمد علی Ahmed Ali

جس وقت ان پر ہمارا عذاب آیا پھر ان کی یہی پکار تھی کہتے تھے بے شک ہم ہی ظالم تھے

أحسن البيان Ahsanul Bayan

جس وقت ان پر ہمارا عذاب آیا اس وقت ان کے منہ سے بجز اس کے اور کوئی بات نہ نکلی واقع ہم ظالم تھے۔

٥۔١ لیکن عذاب آجانے کے بعد ایسے اعتراف کا کوئی فائدہ نہیں۔ جیسا کہ پہلے وضاحت گزر چکی ہے (فَلَمْ يَكُ يَنْفَعُهُمْ اِيْمَانُهُمْ لَمَّا رَاَوْا بَاْسَـنَا) 40۔غافر;85) جب انہوں نے ہمارا عذاب دیکھ لیا تو اس وقت ان کا ایمان لانا، ان کے لئے نفع مند نہیں ہوا۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

تو جس وقت ان پر عذاب آتا تھا ان کے منہ سے یہی نکلتا تھا کہ (ہائے) ہم (ہائے) ہم (اپنے اوپر) ظلم کرتے رہے

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

سو جس وقت ان پر ہمارا عذاب آیا اس وقت ان کے منھ سے بجز اس کے اور کوئی بات نہ نکلی کہ واقعی ہم ﻇالم تھے

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

جب ہمارا عذاب ان پر آیا تو اس کے سوا ان کی اور کوئی پکار نہ تھی کہ بے شک ہم ظالم تھے۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

پھر ہمارا عذاب آنے کے بعد ان کی پکار صرف یہ تھی کہ یقینا ہم لوگ ظالم تھے

طاہر القادری Tahir ul Qadri

پھر جب ان پر ہمارا عذاب آگیا تو ان کی پکار سوائے اس کے (کچھ) نہ تھی کہ وہ کہنے لگے کہ بیشک ہم ظالم تھے،